عمران خان پہلے اپنی آمرانہ اور فسطائی سوچ ختم کریں، وزیراعظم ہاؤس کو یونیورسٹی بنانے، انڈے، کٹے، مرغیوں اور بکریوں سے جی ڈی پی نہیں بڑھے گا:مریم اورنگزیب

عمران خان پہلے اپنی آمرانہ اور فسطائی سوچ ختم کریں، وزیراعظم ہاؤس کو ...
عمران خان پہلے اپنی آمرانہ اور فسطائی سوچ ختم کریں، وزیراعظم ہاؤس کو یونیورسٹی بنانے، انڈے، کٹے، مرغیوں اور بکریوں سے جی ڈی پی نہیں بڑھے گا:مریم اورنگزیب

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان مسلم لیگ (ن)کی ترجمان اور سابق وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے وزیراعظم عمران خان کی جانب سے نتھیا گلی کا سرکاری گیسٹ ہاؤس عوام کے لیے کھولنے کے فیصلے پر کہا ہے کہ وہ پہلے عوام کو اپنی آمرانہ اور فسطائی سوچ سے آزاد کریں،وزیراعظم ہاؤس کو یونیورسٹی بنانے، انڈے، کٹے، مرغیوں، بکریوں سے جی ڈی پی نہیں بڑھے گا۔

نجی ٹی وی کے مطابق مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ عمران خان نے ملک کو نوآبادیات کی عبرتناک مثال بنایا ہوا ہے، تحریک انصاف کو خیبر پختونخوا میں نتھیا گلی کا سرکاری ریسٹ ہاس عوام کے لیے کھولنے میں 6 سال لگے،سرکاری گیسٹ ہاس سے متعلق حکومتی فیصلے کو ڈرامہ  قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس فیصلے سے مہنگائی 10 فیصد سے کم اور ترقی کی شرح 3 فیصد سے زیادہ نہیں ہوجائے گی۔سابق وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیبکا کہنا تھا کہ عمران خان نے صرف ایک سال میں حکومتی اخراجات میں 1100 ارب کا اضافہ کردیا اس لیے وہ ٹیکس دینے والوں کے دکھ کا ڈرامہ نہ کریں۔اس حوالے سے انہوں نے مزید دعوی کیا کہ ٹیکس دہندگان کا ایک کھرب میٹرو پشاور کے کھڈوں پہ ضائع ہوچکا ہے اور 6 سال بعد نتھیا گلی کا سرکاری گیسٹ ہاس کھولنے سے عوام کو روٹی، کاروبار اور روزگار نہیں ملے گا،وزیراعظم ہاؤس کو یونیورسٹی بنانے، انڈے، کٹے، مرغیوں، بکریوں سے جی ڈی پی نہیں بڑھے گا۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد


loading...