بلدیاتی الیکشن میں پی ٹی  آئی کلین سوئپ کرے  گی، بلال غفار

    بلدیاتی الیکشن میں پی ٹی  آئی کلین سوئپ کرے  گی، بلال غفار

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)کراچی میں سڑکوں کی ابتر حالت کی زمہ دار پیپلز پارٹی ہے ٹوٹی پھوٹی سڑکوں کے باعث شہر میں ٹریفک کا نظام بھی درہم برہم ہوگیا ہے سندھ حکومت کی غفلت سے گٹر اور گڑھے سب ایک ہوگئے ہیں جگہ جگہ پانی اور کچرے کے انبار وبائی امراض میں اضافے کا سبب بن سکتے ہیں سندھ حکومت کراچی کو کھنڈر بنانے کے مشن پر ہے شہر میں بلدیاتی نمائندے اور سندھ سولڈ ویسٹ اپنی کارکردگی دکھانے میں ناکام ہوگئے ہیں سندھ حکومت کے دعوے اور وعدے لطیفے بازی کے سوا کچھ نہیں کراچی میں بارشوں کا پانی اب بھی کئی مقامات پر موجود ہے وزیر اعلی سندھ سے سوال کیا جائے تو عمر اور تجربے کا طعنہ دیتے ییں وزیر اعلی سندھ سے نظام نہیں سنبھالا جاتا تو مستعفی ہو جائیں کراچی میں بااختیار بلدیاتی نظام وقت کی ضرورت ہے آئیندہ بلدیاتی انتخابات میں تحریک انصاف بھاری اکثریت سے کامیاب ہوکر بلدیاتی مسائل  حل کرے گی

ڈاکٹر ماہا کو اسلحہ دینے والے ریمانڈپر پولیس کے حوالے

کراچی(اسٹاف رپورٹر)کراچی کے علاقے ڈیفنس میں خودکشی کرنے والی ڈاکٹر ماہا کو اسلحہ دینے والے دونوں افراد کوپیرکے روز عدالت میں پیش کیا گیا۔پولیس کے تفتیشی افسر کے مطابق ڈاکٹر ماہا کی خودکشی میں استعمال ہونے والا اسلحہ سعد کے نام پر تھاجبکہ تابش نے ڈاکٹر ماہا کو اسلحہ اور گولیاں فراہم کیں۔تفتیشی افسر نے عدالت کو بتایا کہ ملزمان کے خلاف سندھ آرمز ایکٹ اور دیگر دفعات کے تحت مقدمہ درج ہوا ہے۔عدالت نے جوڈیشل مجسٹریٹ جنوبی کو پولیس کو دونوں ملزمان کا دو روزکا جسمانی ریمانڈ دے دیا۔واضح رہے کہ پولیس کی جانب سے واقعہ خودکشی قرار دیا گیا ہے، پولیس ذرائع کے مطابق ڈاکٹر ماہا علی نے اپنے دوست جنید کے تشدد سے تنگ آ کر خود کو مارا ہے۔ایس ایس پی ساؤتھ شیراز نذیرکے مطابق متوفیہ ماہا علی کو پستول فراہم کرنے کے الزام میں دو ملزمان کو گرفتار کیا ہے،نائن ایم ایم پستول سعد صدیقی کی ملکیت تھی جو ماہا علی کے مانگنے پر تابش قریشی نے لے کر دی۔پولیس تفتیش میں یہ بات بھی سامنے آئی ہے کہ ماہا علی نے نومبر 2018 میں اپنی سابقہ رہائشی عمارت کی چھت سے کود کر خودکشی کرنے کی کوشش کی تھی مگر کودنے کیلئے صحیح جگہ نہ ہونے کی وجہ سے وہ ناکام رہی۔اس کی وجہ بھی دوست جنید خان کا رویہ تھا تاہم بعدازاں اپنی دوستوں کی مداخلت اور سمجھانے پر ماہا علی نے فوری طور پر ایسا نہیں کیا۔

عامر لیاقت نے ضلع کیماڑی بنانے کو عدالت میں چیلنج کردیا

کراچی(اسٹاف رپورٹر) تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی عامر لیاقت حسین نے ضلع کیماڑی بنانے کے خلاف سندھ ہائی کورٹ میں پٹیشن دائر کردی ہے۔رکن قومی اسمبلی تحریک انصاف عامر لیاقت حسین نے ضلع کیماڑی بنانے کے خلاف سندھ ہائی کورٹ میں پٹیشن دائر کردی ہے۔اس موقع پر عامر لیاقت حسین نے کہاکہ میری پٹیشن کو وزیراعظم عمران خان کی مکمل حمایت حاصل ہے، بڑی منصوبہ بندی سے حکومت سندھ کام کر رہی ہے، فضل الرحمان کے بھائی کو تعینات کرنا بھی منصوبہ بندی کا حصہ تھا جب کہ بلدیاتی حکومت ابھی قائم ہے اس سے مشورہ بھی نہیں کیا گیا۔

سندھ حکومت کاکوئی نمائندہ عوام کی مدد کو نہیں آیا،حلیم عادل 

کراچی (اسٹاف رپورٹر)پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اور سندھ اسمبلی میں پارلیمانی لیڈر حلیم عادل شیخ نے کہا ہے کہ بارش کی پیشگی اطلاعات کے باوجود سندھ حکومت کی جانب سے کوئی اقدامات نہیں کیے گئے۔ہم اپنی مدد آپ کے تحت شہریوں کی مدد کرتے رہے لیکن سندھ حکومت کا کوئی نمائندہ عوام کی مدد کو نہیں آیا۔مرتضیٰ وہاب کو لاہور میں گدھے کے ڈوبنے کی تو فکر ہے لیکن کراچی میں شہریوں کے ڈوبنے پر وہ خاموش رہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے پیر کو سندھ اسمبلی کے باہر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔حلیم عادل شیخ نے کہا کہ آج سے تین روز قبل ترجمان سندھ حکومت مرتضیٰ وھاب ایک تصویر لے کر آئے تھے کہ ایک گدھا لاہور میں ڈوب گیا، مرتضیٰ وھاب اس غم میں نڈھال تھے لیکن ان کو کراچی کی عوام کی فکر نہیں تھی جہاں بارش کی وجہ سے شہری ڈوب روب رہے تھے مرتضیٰ وھاب نے ساری پریس کانفرنس ڈوبے ہوئے گدھے پر کی تھی۔ لاہور تو بارش کے پانچ گھنٹے بعد خشک ہوگیا لیکن کراچی میں کئی روزے علاقے پانی کی زد میں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سندھ کی بہتری کے لئے ایک کوآرڈٰنینشن کمیٹی کام کی ہے اس پر ہم نے اتفاق کیا ہے جس پر ملکر اس ایشو پر چلنا ہے لیکن ہر جماعت کا اپنا موقف ہے۔ گدھا جہاں ڈوبا لاہور میں وہاں پانی پانچ گھنٹے میں پانی ختم ہوگیا۔ لیکن کراچی کا گدھا پانی کے ساتھ ساتھ کچرے میں بھی ڈوبا ہوا تھا۔ گزشتہ روز اخبارات نے بھی دکھایا کہ ناگن چورنگی میدان جنگ کا منظر پیش کر رہا ہے مرتضیٰ وھاب اس پر بھی پریس کانفرس کرلیتے۔ کاش مرتضیٰ وھاب کو جتنی فکر لاہور میں گدھے کے ڈوبنے کی تھی اس سے آدھی فکر کراچی کے شہریوں کی ہوتی۔ کاش سندھ کے حکمرانوں کو ناگن چورنگی، احسن آباد، سرجانی ٹاؤن، خدا کی بستی، نارتھ کراچی، نیو کراچی، گجر نالا، ایف سی ایریا کے کی فکر ہوتی۔ایک گھر کے تین لوگ ڈوب جاتے ہیں بچانے والا کوئی نہیں آتا۔ تین ہٹی پر بچہ فٹ بال لینے جاتا ہے ڈوب جاتا ہے کوئی نکالنے نہیں آتا ہے۔

کراچی:گھر سے تین بچوں کی ماں کی تشدد زدہ لاش برآمد

کراچی (کرائم رپورٹر)کراچی کے علاقے اورنگی بازار کے گھر سے تین بچوں کی ماں کی تشدد زدہ لاش ملی ہے۔مقامی پولیس کے مطابق مقتولہ کے والد اکبر علی کی مدعیت میں قتل کا مقدمہ درج کر لیا گیا ہے جبکہ مقتولہ حنا زوجہ اسحاق پٹھان کو تیز دھار آلے سے قتل کیا گیا ہے۔پولیس کے مطابق مقدمہ دفعہ 302 کے تحت مقتولہ کے شوہر کے خلاف درج کر لیا گیا ہے۔پولیس کی جانب سے درج کی گئی ایف آئی آر کے مطابق ملزم اسحاق پٹھان بیوی کو قتل کرنے کے بعد مکان کے کاغذات بھی ساتھ لے گیا ہے۔

https://dailypakistan.com.pk/20-Sep-2020/1186449

سندھ اسمبلی کا اجلاس ڈیڑھ گھنٹہ تاخیر سے شروع ہوا 

کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ اسمبلی کا اجلاس پیر کو ڈیڑھ گھنٹہ تاخیر سے قائم مقام اسپیکر ریحانہ لغاری کی صدارت میں شروع ہوا، کارروائی کے آغاز میں بارشوں سے ہونے والی تباہی اور جاں بحق افراد کے ایصال ثواب کے لئے فاتحہ خوانی کی گئی۔اجلاس میں گمز کے روح رواں رحیم بخش بھٹی پر حملیکی مذمت کرتے ہوئے انکے تحفظ کی دعا کی گئی اور حکومت کے علاوہ لیاری ندی میں ڈوب کر جاں بحق بچے کے ایصال ثواب اور انکے والدین کو صبر جمیل کی دعا کی گئی۔ایوان میں کئی ارکان ماسک کے بغیر موجود تھے۔قائم مقام اسپیکر کی ارکان کو ماسک پہننے کی ہدایت کی۔

سرکاری ملازمین کو گروپ انشورنس دینے کے پابند ہیں،مکیش کمار

کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ کے وزیر پارلیمانی امورمکیش کمار چالہ نے کہا کہ ہے کہ حکومت سندھ سرکاری ملازمین کو گروپ انشورنس دینے کی پابند ہے اور اس سلسلے میں اسٹیٹ لائف سے بات چیت بھی چل رہی ہے انہوں نے یہ بات پیر کو سندھ اسمبلی کے اجلاس میں جی ڈی اے کی خاتون رکن نصرت سحر عباسی کے ایک توجہ دلا نوٹس کے جواب میں کہی۔ نصرت سحر کا کہناتھا کہ سرکاری ملازم کی تنخواہ سے مخصوص رقم انشورنس کی مد میں کٹتی ہے لیکن اس کے باوجود وہ گروپ انشورنس سے محروم ہیں۔عدالتی حکم کے باوجود صوبائی حکومت ان ملازمین کو گروپ انشورنس نہیں دی جارہی۔ وزیرپارلیمانی امور مکیش چاولہ نے کہا کہ اس حوالے عدالتی احکامات واضح ہیں جن پر پوری طرح عمل درآمد کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ گروپ انشورنس سے متعلق ریٹس کا ایشو ہے،آئندہ کابینہ اجلاس میں اس معاملے کو حتمی شکل دی جائیگی۔ ایم کیوایم پاکستان کے علی خورشیدی نے کراچی میں پانی کی کمی سے متعلق توجہ دلاو  نوٹس پیش کیا۔ان کا کہنا تھا کہ کراچی کے بیشتر علاقے خصوصا ضلع غربی میں پانی کی شدید قلت ہے۔حکومت بتائے کب پانی فراہم کریگی؟پارلیمانی سیکریٹری برائے بلدیات سلیم بلوچ نے کہا کہ کراچی کو پانی کی فراہمی کے دو وسائل ہیں۔حب ڈیم سے کراچی کو سو ملین گیلن پانی کا شیئر ملتا ہے،بارشوں کے بعد حب ڈیم بھر چکا ہے۔جتنی قلت پہلے تھی اب اتنی نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت نے تجویز دی ہے کہ حب ڈیم سے کراچی کو ڈیڑھ سو ملین گیلن پانی دیاجائے تاکہ یہ مسئلہ مستقل حل کیا جائے۔ ایم کیو ایم کے رکن صداقت علی نے اورنگی ٹاو ن میں پانی کی کمی سے متعلق توجہ دلاو  نوٹس پر کہا کہ اورنگی ٹاون میں کہاں پانی آرہا ہے بتایا جائے؟حکومت غلط بیانی سے کام لے رہی ہے۔صداقت علی نے اشعار پڑھ دئیے جس پر قائم مقام اسپیکر نے انہیں ٹوکا اور کہا کہ یہاں کوئی مشاعرہ نہیں ہورہا۔

 علماء کرام منبر سے ووٹ کی اہمیت پر زور دیں، فیصل بلوچ

کراچی(پ ر) علماء کرام اور سیاسی کارکنان مل کر عوام پاکستان کی فلاح و بہبود کے لیئے کام کرسکتے ہیں علماء  اپنے منبر سے ووٹ کی اہمیت و افادیت پر عوام کی ذہن سازی کریں اور ووٹ سب سے بہتر امیدوار کو دینے کی ترغیب دیں آواز خلق فاؤنڈیشن کے بانی و صدر فیصل علی بلوچ نے پیس اینڈ ایجوکیشن فاؤنڈیشن کے زیر اہتمام مہران ہوٹل میں  فوکس ڈسکشن بعنوان جمہوری اقدار کے فروغ پر خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کے سیاسی جماعتوں کو اپنے کارکنان کی تربیتی نشستیں کرنی ہوں گی انہیں برداشت کی اور ایشوز کی سیاست کو فروغ دینا ہوگا اور ذاتیات کی سیاست سے دور کرنا ہوگا اگر سیاسی کارکنان اپنا کردار صحیح ادا کریں تو کسی کو جمہوریت کی بقا کی جدوجہد نہیں کرنی ہوگی اب مفاد عامہ کے لیئے کام کرنا ہوگا اور ذاتی مفادات کو بالائے پشت کرکے معاشرے کی از سر نو تعمیر کرنی ہوگی

چوہدری شجاعت نے مشاورت کیلئے طارق حسن کو طلب کرلیا

کراچی(پ ر) پاکستان مسلم لیگ (ق) کے مرکزی صدر سابق وزیر اعظم چوہدری شجاعت حسین نے مسلم لیگ سندھ کے صدر محمد طارق حسن کو صوبہ سندھ بلخصوص کراچی کے درپیشں مسائل و حکومتی کمیٹی. بلدیاتی انتخابات سمیت دیگر امور کے حوالے سے گفتد وشنید مشاورت کیلئے لاہور طلب کرلیا سندھ کے صدر محمد طارق حسن نے لاہور روانگی سے قبل کہا کہ کراچی میں سیاسی بنیاد پر ضلع کا اضافہ. ازسرنو مردم شماری اور پر امن کراچی میں لسانی فسادات کے خدشات سمیت عوام کی حق تلفی اور کراچی کیمسائل کے حل کیلئے چوہدری شجاعت حسین اور سیکرٹیری جنرل وفاقی وزیر طارق بشیر چیمہ کو تفصیل سے آگاہ اور مسلم لیگ (ق) کی جانب سے منعقدہ آل پارٹیز کانفرنسں . وفاقی حکومت کے عدم تعاون اور تنظیمی صرتحال کے حوالے سے قائدین کو آگاہ کرینگے

آن لائن بلز کی ادائیگی، کے الیکٹرک اور درازمیں اشتراک 

کراچی(پ ر)ملک کی واحد ورٹیکلی انٹیگریٹیڈ پاور یوٹیلیٹی، کے الیکٹرک نے پاکستان کے ممتاز ای-کامرس پلیٹ فارم، دراز (Daraz.pk)  کے ساتھ ایک شراکت قائم کی ہے جس کا مقصد کراچی سے تعلق رکھنے والے صارفین کوڈیجیٹل ادائیگی کا حل پیش کرنا ہے۔ اس پلیٹ فارم کی بدولت کے الیکٹرک کے صارفین اپنے بجلی کے بلز ”dBills“ دراز پر موجود مخصوص چینلز، Visa اور Mastercard ڈیبٹ /کریڈٹ کارڈ،  DarazWallet، Easypaisa یا JazzCash کے ذریعے بلوں کی ادائیگی کر سکیں گے۔کے الیکٹرک کے صارفین کو چیک آؤٹ کے موقع پر پرومو کوڈ KEDAZ10 استعمال کرنے پر، بجلی کے بلوں کی ادائیگی پر 10 فیصد(700 روپے تک)ڈسکاؤنٹ بھی دیا جائے گا۔اس بارے میں کے الیکٹرک کے ہیڈ آف اسٹریٹیجی اینڈ کمرشل پلاننگ، احسن انیس نے کہا کہ:”درازکے ساتھ یہ شراکت ڈیجیٹلائزیشن کے ذریعے اپنے صارفین کو سہولت پہنچانے کی جانب ایک اہم قدم ہے۔ ہمیں توقع ہے کہ ہم بعض ایسے ممالک کی پیروی کررہے ہوں گے جہاں، کووِڈ19- کے باعث لاک ڈاؤن کے دوران 90 فیصد پاور یوٹیلیٹی بلز ای-پیمنٹ چینلز کے ذریعے ادا کیے گئے تھے۔“منیجنگ ڈائریکٹر دراز پاکستان، احسان سایانے اپنے تاثرات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ:”ہم مسلسل ایسے نئے ذرائع تلاش کر رہے ہیں جن کے ذریعے ملک کی ڈیجیٹلائزیشن میں اپنا کردار ادا کر سکیں۔ اس مشکل وقت میں کے الیکٹرک کے ساتھ ہمارا اشتراک اس بات کو یقینی بنائے گا کہ لوگوں کو اپنی بنیادی ضرورت کو پورا کرنے کے لیے گھر سے باہر جانے کی ضرورت پیش نہ آئے۔“

ای ایف یو لائف

 نے ہیلتھ اینڈسیفٹی 

ایوارڈ“جیت لیا

کراچی(پ ر)ای ایف یو لائف ایشورنس لمیٹیڈ،  مُلک کے نجی شعبے میں بیمہ حیات فراہم کرنے والی ممتاز کمپنی کو،  چھٹے سالانہ انٹرنیشنل اینوائیرنمنٹ ہیلتھ اینڈ سیفٹی ایوارڈز  (بین الاقوامی ماحولیاتی صحت اور تحفظ ایوارڈ)  کی تقریب میں، جس کا اہتمام پروفیشنلز نیٹ ورک اینڈ ایتھیکل بزنس اپ ڈیٹ (ای بی یو) کی جانب سے کیا گیا تھا، صحت اور حفاظت ایوارڈ سے نوازا گیا۔ محترمہ ایولین ڈی ابروگینا، ہیڈ سی ایس آر انیشئیٹوز (CSR Initiaves)،  ایف یو لائف ایشورنس لمیٹیڈ، نے کمپنی کی جانب سے یہ ایوارڈ وصول کیا۔  یہ ایوارڈ صحت کے شعبے میں کمپنی کے حصّے کا، اور ماحول اور تحفّظ کی جانب اس کے کردار کا اعتراف ہے۔ ای ایف یو لائف ماحول کی بہتری اور اس کے تحفّظ میں اپنا حصّہ پیش کرنے اور اسکو ترقی دینے میں آگے سے آگے رہی ہے اور وہ اس معاشرے کے ساتھ، جس میں وہ کام کرتی ہے، ایک مثبت تعلق بنانے کے لئے ایک محور کا کام کرنے والا کردار ادا کرنے پر یقین رکھتی ہے۔

سندھ اسمبلی نے فنانس ترمیمی بل 2020متفقہ طور پر منظور کر لیا

 کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ اسمبلی نے پیر کو اپنے اجلاس کے دوران سندھ فنانس ترمیمی بل 2020متفقہ طور پر منظور کرلیا جو وزیر ریوینیو مخدوم محبوب الزماں نے پیش کیا تھا۔بل کے تحت سندھ میں کیپیٹیل ویلیو ٹیکس ختم کردیا گیا ہے جس سے تعمیراتی صنعت، رئیل اسٹیٹ کے شعبے کو فرو غ ملے گا۔بل کے تحت حکومت سندھ نے تعمیراتی شعبے کے لئے مختلف مراعات کا اعلان کیا ہے جس سے چالیس صنعتوں کو براہ راست فائدہ ہوگا۔ کپیٹل ویلیو ٹیکس غیر منقولہ جائیداد کی لیز، خرید وفروخت، منتقلی پر وصول کیا جاتا تھا۔اس ٹیکس سے سندھ حکومت کو اربوں روپے کی وصولی ہوتی تھی۔وزیر ریوینیو نے کہا کہ یہ قومی کاز ہے جس کے لئے حکومت سندھ نے قربانی دی اسکا سہرا چیئرمین پیپلزپارٹی کو جاتا ہے۔انہوں نے کہا کہ اس طرح کے اقدام وفاقی حکومت کو بھی ا ٹھانے چاہئیں۔ان کا کہنا تھا کہ صنعتی سیکٹر کیلئے سندھ حکومت نے 5 ارب ٹیکس کلیکشن کی قربانی دی ہے ہماری خواہش ہے کہ وفاق بھی سندھ کے مثبت اقدام کا مثبت جواب دے۔اپوزیش لیڈر فردس شمیم نقوی نے کہا کہ سندھ میں پراپرٹی ٹیکس کی ریکوری بہت زیادہ ہے،دوسرے صوبوں میں کتنا ٹیکس عائد ہے۔آج دوسرے صوبے زیادہ مراعات دے رہے ہیں اس لئے سرمایہ کار وہاں جارہے ہیں۔حیدراباد، سکھر لاڑکانہ میں بھی اس حوالے سے کام ہونا چاہیے۔انہوں نے کہا کہ کنسٹریکشن انڈسٹری پر توجہ کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ یہاں تجاویزات ختم۔کرنے کی بات ہورہی ہے یہی اعلان کردیں کے چھوٹے گھروں کی تعمیر کوئی ٹیکس نہیں لیا جائے گا۔ایم کیو ایم کے خواجہ اظہار نے کہا کہ آج اسلام آباد ائیر پورٹ کے اطراف پراجیکٹس نظر آتے ہیں، کراچی خشک ہے۔سی وی ٹی ختم کرنے کے ساتھ ودہولڈنگ ٹیکس میں چھوٹ بھی دی جائے تو اور اچھا ہوگا۔وفاق بھی ودہولڈنگ ٹیکس ختم کرے۔ ایم کیو ایم کے رکن جاوید حنیف نے کہا کہ کراچی کی تین اسکیمیں ادھوری پڑی ہیں،تیسر ٹاون، گلشن ملیر اور ہاکس بے اسکیموں میں ڈھائی لاکھ پلاٹ ہیں۔اگر ان اسکیموں میں تھوڑی سے ترقیاتی کام کئے جائیں تو بہت سے لوگ آباد ہونگے اور روزگار بھی بڑھے گا۔وزیر تعلیم سعید غنی نے کہا کہ سندھ حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ تجاویزات میں رہائش پزیر افراد کی رہائش کا پہلے بندوبست کیا جائے گا۔ان کا کہنا تھا کہ کراچی میں کثیر المنزلہ عمارتوں پر پابندی ہے پانی کے کنکشن نہیں ملتے دیگر شہروں میں یہ پابندیاں نہیں ہیں۔ایوان کی کارروائی کے دوران پینل آف چیئرمین کے شرجیل انعام میمن نے جو اجلاس کی صدارت کررہے تھے گورنر سندھ کی جانب سے سات بلوں کی منظوری کا اعلان کیا۔ایوان میں چار نئے بل بھی متعارف کرادیئے گئے۔ جن میں حصول اراضی کا ترمیمی، سندھ لینڈ روینیوترمیمی بل، سندھ ایکسپلوسوز بل اور سندھ کانٹریکٹ کی بنیاد پر بھرتی اساتذہ کی مستقلی کا ترمیم بل 2019شامل ہیں۔تمام بل مزید غور کے لئے قائمہ کمیٹی کے سپردکردیئے گئے۔

سیکرٹری بلدیات سندھ ضمانت مسترد ہونے پر گرفتار 

کراچی(اسٹاف رپورٹر)سندھ ہائی کورٹ نے سیکرٹری بلدیات روشن علی شیخ سمیت 10 ملزمان کی درخواست ضمانت مسترد کر دی ہے۔پیرکوسندھ ہائیکورٹ میں زمین کی غیر قانونی الاٹمنٹ سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔ عدالت نے سیکرٹری بلدیات روشن علی شیخ اور دیگر ملزمان کی درخواست ضمانت مسترد کرتے ہوئے انہیں گرفتار کرنے کا حکم دے دیا۔دوران سماعت عدالت نے ریمارکس دیئے کہ ملزمان کی جانب سے اختیارات کے ناجائز استعمال کو تقویت ملتی ہے، ملزمان نے اختیارات کا ناجائز استعمال کر کے قومی خزانے کو نقصان پہنچایا ہے۔زمین کے غیر قانونی الاٹمنٹ سے متعلق کیس کے دیگر ملزمان میں فضل الرحمان، وسیم، ندیم، قادر کھوکھر، صبیحہ اسلام اور دیگر شامل ہیں۔ملزمان نے گرفتاری سے بچنے کے لیے عدالت سے عبوری ضمانت حاصل کر رکھی تھی۔نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ روشن علی شیخ اور دیگر کے خلاف ریفرنس دائر ہوچکا ہے۔ کے ایم سی اور بورڈ آف ریونیو کی ملی بھگت سے ذبیحہ خانہ کی 265 ایکڑ اراضی غیر قانونی طور الاٹ کی گئی جبکہ ملزمان نے لانڈھی میں اسمال کارٹیج انڈسٹری کو زمین الاٹ کی تھی۔

ایکسائز پولیس کراچی کی 

کارروائی، 2 ملزمان گرفتار

کراچی (اسٹاف رپورٹر) صوبائی وزیر برائے ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات اور پارلیمانی امور مکیش کمار چاؤلہ کی ہدایت پر منشیات فروشوں کے خلاف کارروائی تیز کرتے ہوئے محکمہ ایکسائز پولیس کراچی نے دو مختلف کاروائیوں میں منشیات فروشوں کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے دو ملزمان کو گرفتارکر کے ان کے قبضے سے ہیروئن اور چرس برآمد کرلی۔ تفصیلات کے مطابق اسسٹنٹ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات افسر ہرجی مل نے ملزم اجمل خان کو پاکستان جنرل اسٹور کرسچن کالونی کے نزدیک سے گرفتار کرکے ملزم کے قبضے سے 1050 گرام ہیروئن برآمد کرلی جبکہ دوسرے  ملزم زین العابدین کو لائنز ایریا اسٹوڈینٹ بریانی کے پاس سے گرفتار کیا گیا اور ملزم کے قبضے سے 500 گرام چرس برآمد ہوئی۔ دونوں ملزمان کے خلاف مقدمات درج کر کے تفتیش شروع کردی گئی ہے۔

حسین لاکھانی ٹرسٹ کایوسف گوٹھ میں میڈیکل کیمپ 

کراچی (اسٹاف رپورٹر) حسین لاکھانی ٹرسٹ کے زیر اہتمام یوسف گوٹھ سرجانی ٹاؤن میں بارشوں سے متاثرہ افراد کے علاج معالجے کے لیئے فری میڈیکل کیمپ کا انعقاد، فری میڈیکل کیمپ میں مقامی لوگوں کامعائنہ کیا گیا اور طبی امداد فراہم کی گئی، کیمپ میں میڈیکل اسپیشلسٹ، جلدی امراض، گائنی اور بچوں کے ڈاکٹرز نے ایک ہزار سے زائد مریضوں کا معائنہ کیا، شوگر ٹیسٹ، بلڈ ٹیسٹ، الٹراساؤنڈ اور بلڈ پریشر کے چیک کی سہولیات بھی دستیاب تھیں، اس موقع پر پاکستان تحریک انصاف کے رہنماء و سربراہ بیت المال سندھ حنید لاکھانی نے کیمپ کا دورہ کیا اور شدید بارشوں سے متاثرہ لوگوں سے ملاقات بھی کی، میڈیا سے بات چیت کے دوران حنید لاکھانی کا کہنا تھا کہ آج ہم نے یہاں میڈیکل کیمپ کا انعقاد کیا ہے جس کا مقصد یہاں کے لوگوں کو فری طبی سہولیات کی فراہمی ہے، اس علاقے میں بارشوں نے تباہی مچا دی ہے اور حکومت سندھ کو ہوش ہی نہیں ہے، سندھ حکومت کے لوگوں کے دلوں میں قوم کے لیئے کوئی درد نہیں ہے ان لوگوں کے دلوں پر کالک لگی ہوئی ہے بے حس، جھوٹے اور مکار لوگ ہیں، ہمارے   پا س ایمبولینسز ہیں جو مریضوں کو لیکر ہسپتال میں شفٹ کر رہے ہیں، یہ کام سندھ حکومت کا ہے جن کے پاس بجٹ ہے اور تمام سہولیات میسر ہیں، یہ بہت بڑا علاقہ ہے اور ایک کونے میں بیٹھے ہوئے ہیں ایک چھوٹے سے علاقے کو کور کر رہے ہیں 

 کراچی میں مواصلاتی نظام بہتر کرنے کیلئے خطیر رقم نہیں، سعید غنی

 کراچی(این این آئی)وزیر تعلیم سندھ سعید غنی نے کہا ہے کہ کراچی سمیت سندھ کے معاملات پر کمیٹی تشکیل دینا خوش آئند ہے۔ کراچی میں مواصلاتی نظام کو بہتر کرنے کے لیے خطیر رقم نہیں ہے،سندھ میں وفاق کے منصوبوں پر کام میں تاخیر ہوتی ہے۔اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ سکول کھولنے سے متعلق فیصلہ 7ستمبر کے اجلاس میں ہوگا۔کراچی میں بارش کے بعد پیدا ہونے والی صورت حال سے متعلق انہوں نے کہا کہ سرجانی ٹاؤن میں زیادہ بارش ہوئی تھی۔ عدالت نے نالوں سے تجاوزات کو ہٹانے کا حکم دیا تھا، نالوں کے رہائشیوں کے پاس کوئی اور آپشن نہیں کیونکہ یہ حکم عدالت کا ہے۔انہوں نے کہا کہ کراچی کے انڈرپاسز میں بارش کا پانی زیادہ جمع نہیں ہوا۔

سعید غنی

مزید :

صفحہ آخر -