حکومت مخالف تحریک کیلئے جے یو آئی (ف) کی سولوفلائٹ تیار، پلان مرتب 

  حکومت مخالف تحریک کیلئے جے یو آئی (ف) کی سولوفلائٹ تیار، پلان مرتب 

  

لاہور(شہزاد ملک)اپوزیشن جماعتوں پاکستان پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ (ن) کی جانب سے تا حال اے پی سی کے انعقاد کے حوالے سے کوئی بھی سنجیدہ عملی اقدامات سامنے نہ آنے پر جے یو آئی (ف) نے ان جماعتوں سے اپنے راستے جدا کرکے سولو فلائٹ کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ یوم عاشورہ کے بعد ملک گیر عوامی رابطہ مہم، آئندہ ماہ ستمبر میں حکومت کیخلاف احتجاجی تحریک کے سلسلے میں ملک گیر کانفرنسوں کا سلسلہ شرو ع کرنے کا پلان بھی ترتیب دیدیا۔ عاشورہ کے بعد اس بات کی امید بھی ظاہر کی ہے کہ اگر مسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی کی جانب سے اے پی سی کے انعقاد کے حوالے سے کسی حتمی تاریخ کاانعقاد کیا گیا تو ٹھیک ورنہ جے یو آئی اپنے سولو فلائٹ پلان پر مکمل عمل کرے گی جس کے تحت پہلے حکومت مخالف عوامی رابطہ مہم پھر احتجاجی کانفرنسیں اور جلسے جلوس بعدازاں احتجاجی مارچ کااعلان کیا جائیگا۔جے یو آئی (ف) کے ذرائع نے پاکستان کو بتایا کہ ابھی تک جے یو آئی ف کی قیادت حکومت کیخلاف مشترکہ احتجاجی تحریک چلانے کیلئے مسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی کی طرف دیکھ رہی ہے کہ وہ اے پی سی کے انعقاد، ایجنڈے کااعلان اور اپوزیشن جماعتوں کی رہبر کمیٹی کی کب میٹنگ کال کر تے ہیں تاکہ اے پی سی کے ایجنڈے اور احتجاجی تحریک کو حتمی شکل دی جا سکے۔ذرائع کے مطابق ابھی تک اپوزیشن کی رہبر کمیٹی کی میٹنگ بلانے کا فیصلہ نہیں ہوا، تاہم جے یو آئی عاشور کے بعد رہبر کمیٹی کی میٹنگ کال کئے جانے کیلئے پر امید ہے،تاہم جے یو آئی نے اس کیساتھ ساتھ اپنے ذاتی پلان کو بھی حتمی شکل دیدی ہے،جس کے تحت وہ اکیلے ہی احتجاجی تحریک چلائے گی تاہم اس دوران بھی جے یو آئی اپوزیشن کی جماعتوں کیساتھ رابطوں کا سلسلہ جاری رکھے گی اور کوشش کریگی کہ ملک بھر میں اپوزیشن کی مشترکہ احتجاجی تحریک کا کوئی شیڈول طے پا جائے۔ 

جے یو آئی پلان

مزید :

صفحہ اول -