چیچہ وطنی، 15 مسلح افراد کا شہری کے اہل خانہ پروحشیانہ تشدد

چیچہ وطنی، 15 مسلح افراد کا شہری کے اہل خانہ پروحشیانہ تشدد

  

چیچہ وطنی(نامہ نگار، نمائندہ خصوصی)15 مسلح افراد احاطہ پر قبضہ کرنے اور دوسری شاد ی کرنے کی رنجش پر میرے گھر میں داخل ہو کر میری دونوں بیویوں اور بچوں کو تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے ادھ موا کر دیا ایک بیوی کے پیٹ میں ڈھڈے مار مار کر آپریشن کے ٹانکے توڑ دئیے، گھریلو سامان احاطے کے باہر پھینک دیا اور گھر سے چار تولے طلائی زیورات اور 85 ہزار روپے کی نقدی بھی لے گئے۔ یہ باتیں نواحی گاؤں 36/12-L کے رہائشی محمد اشرف ولد حسن محمد نے اپنی دونوں بیویوں حرا اور کلثوم اور بچوں کے ہمراہ چیچہ وطنی پریس کلب میں احتجاج کرنے کے بعد پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتائیں، اس نے بتایا کہ میں کچھ عرصہ قبل پہلی بیوی کی رضا مندی سے دوسری شادی کی تھی اس رنجش اور میرے احاطے پر قبضہ کرنے کیلئے محمد اشفاق، اصغر علی، حاکم علی، اکرام، ننھا فقیر نے اپنے ساتھیوں کے ہمراہ میرے گھر پر دھاوہ بول دیا اور میری دونوں بیویوں حرا، کلثوم اور بچوں کو تشدد کا نشانہ بنایا اور گھر کا سامان زبردستی سڑک پر پھینک دیا او ر گھر سے  چار تولے طلائی زیورات اور 85 ہزار روپے کی نقدی بھی لے گئے، ملزمان نے میری بیوی کے پیٹ میں ڈھڈے مار مار کر اسکے آپریشن کے ٹانکے توڑ دئیے جس سے وہ بے ہوش ہو کر گر گئی، محلے داروں نے منت سماجت کر کے میری بیویوں اور بچوں کی جان چھڑائی اور ہسپتال پہنچایا، پولیس نے ابھی تک ہمارا مقدمہ درج نہ کیا ہے اور ملزمان کے ساتھ ساز باز ہو گئی ہے۔

 انہوں نے چیچہ وطنی پریس کلب کی وساطت سے آئی جی پنجاب، آر پی او ساہیوا ل اور ڈی پی او ساہیوال سے بااثر ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرنے اور زیور اور نقدی واپس دلوانے کا مطالبہ کیا ہے۔

مزید :

علاقائی -