میئرکراچی کا نام ای سی ایل میں ڈال کر حساب لینا چاہیے،وسیم اختر اس شہر کے چوکیدار تھے اُنہوں نے۔۔۔مصطفی کمال پھٹ پڑے

میئرکراچی کا نام ای سی ایل میں ڈال کر حساب لینا چاہیے،وسیم اختر اس شہر کے ...
میئرکراچی کا نام ای سی ایل میں ڈال کر حساب لینا چاہیے،وسیم اختر اس شہر کے چوکیدار تھے اُنہوں نے۔۔۔مصطفی کمال پھٹ پڑے

  

  کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن) پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین مصطفی کمال  نے کہا ہے کہ میئر کراچی کا نام ای سی ایل میں ڈال کر ان سے حساب لینا چاہیے، وسیم اختر اس شہر کے چوکیدار تھے انہوں نے اسے لوٹا ہے۔

تفصیلات کے مطابق شہرقائد میں موسلادھار بارش سے تباہ کاریوں پر تبصرہ کرتے ہوئے مصطفی کمال نے کہاکہ کراچی تباہ ہورہا ہے تو پورا ملک تباہ ہورہا ہے،یہ قومی سلامتی کا مسئلہ ہے، خدا کے واسطے کراچی کو تنہا نہ چھوڑیں اس پر رحم کریں، کراچی مقبوضہ کشمیر نہیں ہے کہ وفاق مداخلت نہیں کرسکتا،وفاقی ادارے کراچی آئیں اور ترمیم لائیں، کراچی پاکستان کی شہ رگ ہیں، وزیراعظم کراچی آئیں، 18ویں ترمیم کے بعد اختیارات دفاتر تک محدود ہیں۔سابق ناظم کراچی مصطفیٰ کمال کا کہنا تھا کہ نالوں کی صفائی کے لیے ضروری ہے کہ پہلے تجاوزات ختم کریں، نالوں کی صفائی کے لیے پہلے انفراسٹرکچر ترتیب دیاجائے، سندھ حکومت نالوں کے اطراف زمینیں دے کر انفراسٹرکچر بنائے، وزیراعلی سندھ کئی دنوں سے تاثر دے رہے ہیں کہ کراچی بہت اچھا کردیا،وزیراعلی سندھ تاثر دیرہے ہیں کہ کراچی10سال پہلے خراب تھا، حکمران نہ ماننے والی باتیں کریں تو یہ تباہی اور بربادی کا سبب ہے، ہمارے حکمران بے حسی کی شکل اختیار کرچکے ہیں، عوام اچھی طرح جانتے ہیں کہ کراچی 10سال پہلے کیا تھا اورآج کیا ہے۔

مصطفی کمال نےبتایاکہ میرے پہلے سال میں باتھ آئی لینڈ میں 28روز تک پانی جمع رہاتھا، جب باتھ آئی لینڈ سے پانی نکلا تو6ماہ تک وہاں ڈرین لائن بچھائی،ہماری کاوشوں کی وجہ سےآج باتھ آئی لینڈ میں پانی جمع نہیں ہوتا،میئر کراچی4سال گزرنےکےبعدبھی مگرمچھ کےآنسو رورہے ہیں ، میئر کراچی کا نام ای سی ایل میں ڈال کر ان سے حساب لینا چاہیے، وسیم اختر اس شہر کے چوکیدار تھے اُنہوں نے اسے لوٹا ہے۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -