نیوزی لینڈ مسجد پر حملہ کرنے والوں کا شہداءکے والدین سے سامنا، دکھی ماں نے اس سے ایسی بات کہہ دی کہ ہر آنکھ نم ہوگئی

نیوزی لینڈ مسجد پر حملہ کرنے والوں کا شہداءکے والدین سے سامنا، دکھی ماں نے اس ...
نیوزی لینڈ مسجد پر حملہ کرنے والوں کا شہداءکے والدین سے سامنا، دکھی ماں نے اس سے ایسی بات کہہ دی کہ ہر آنکھ نم ہوگئی

  

ولنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک) نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ میں ایک سفید فام دہشت گرد نے دو مساجد میں فائرنگ کرکے 51نمازیوں کو شہید کر دیا تھا۔ گزشتہ روز عدالت میں اس دہشت گرد کا ایک شہید نمازی کی والدہ سے سامنا ہو گیا اور اس خاتون نے دہشت گرد کو ایسی بات کہی کہ سن کر ہر آنکھ نم ہو گئی۔ میل آن لائن کے مطابق اس خاتون کا نام میسون سلمیٰ تھا جس کا 33سالہ بیٹا عطاءایلیان اس دہشت گرد کی فائرنگ سے شہید ہو گیا تھا۔ 

خاتون نے عدالت میں اس سفید فام دہشت گرد سے سامنا ہونے پر اسے کہا کہ ”تم نے خود اپنی انسانیت کو قتل کیا۔ میں تمہیں کبھی معاف نہیں کروں گی، اور میرا نہیں خیال کہ یہ دنیا بھی تمہارے اس ہولناک جرم کو کبھی معاف کر سکے گی۔تم نے اس زندگی میں جو شیطانی فعل کیا ہے، خدا کرے تمہیں اس کی سخت سے سخت سزا ملے۔“ واضح رہے کہ اس سفید فام دہشت گرد کو سزا سنانے کے لیے 4روزہ سماعت شروع ہو چکی ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -