بھارت ا ور پاکستان کے درمیان موجود مذاکراتی تعطل کا بھارت ذمہ دار ہے ‘ تسنیم اسلم

بھارت ا ور پاکستان کے درمیان موجود مذاکراتی تعطل کا بھارت ذمہ دار ہے ‘ تسنیم ...

  

 اسلام آباد(کے پی آئی)پاکستان کی وزارت خارجہ کی ترجمان تسنیم اسلم نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر سمیت تمام حل طلب مسائل کا حل اب ناگزیر بن گیا ہے تاکہ خطے کو کسی بھی تباہ کن صورت حال سے بچایا جائے ۔ ایک بھارتی ٹیلی ویژن چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے پاکستانی وزارت خارجہ کی ترجمان تسنیم اسلم نے کہا کہ پاکستان خطے کی خوشحالی کے لیے بھارت سے مذاکرات کا خواہاں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان سرکریک سے لے کر مسئلہ کشمیر تک تمام مسائل کا پرامن اور پائیدار حل چاہتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ان مسائل کا حل اب ناگزیر بن گیا ہے ۔ پاکستانی وزارت خارجہ کی ترجمان نے کہا کہ جنوبی ایشیا میں مسئلہ کشمیر ایک اہم حل طلب مسئلہ ہے تاہم کئی دہائیاں گزرنے کے باوجود اس کا حل نہ نکالنا ایک حیران کن معاملہ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان ہر بار بھارت کے ساتھ مذاکرات کی وکالت کرتا آیا ہے مگر بد قسمتی کی وجہ سے بھارت بلا جواز پاکستان پر الزام تراشی کرنے سے گریز نہیں کر رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان سب سے زیادہ دہشت گردی کا شکار ہوا ہے مگر بھارت اس حقیقت کو سمجھنے کی کوشش تک نہیں کر رہا ہے اور الٹے پاکستان پر دہشت گردی کا الزام لگا رہے ہے جو حقیقت سے بعید ہے ۔ تسنیم اسلم نے کہا کہ بھارت ا ور پاکستان کے درمیان موجود تعطل کے لیے بھارت کو براہ راست ذمہ دار قرار دیتے ہوئے پاکستان نے دو ٹوک الفاظ میں کہا ہے کہ وہ ہمیشہ کی طرح آج بھی مذاکرات کے لیے تیار ہے تاہم اس سلسلے میں اب کی بار بھارت کو پہل کرنا ہو گی جس نے مذاکرات کا سلسلہ منسوخ کر دیا ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اپنے پڑوسی ملک کے ساتھ آج بھی بہتر تعلقات کا متمنی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اگر بھارت مسائل کے حل کے لیے ایک قدم آگے بڑھے گا تو پاکستان دس قدم آگے بڑھے گا۔ انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر اور دوسرے تمام حل طلب مسائل کے پائیدار حل کے لیے پاکستان نے کبھی منہ نہیں موڑا بلکہ ہمیشہ مذاکرات کو ترجیح دی ۔

مزید :

عالمی منظر -