سندھ میں تیار ہونیوالی چینی کی پنجاب میں ترسیل روکی جائے؛شوگر ملز ایسوسی ایشن

سندھ میں تیار ہونیوالی چینی کی پنجاب میں ترسیل روکی جائے؛شوگر ملز ایسوسی ...

  

                              لاہور(کامرس رپورٹر)پاکستان شوگر ملز ایسوسی ایشن پنجاب نے چیف سیکریٹری پنجاب سے درخواست کی ہے کہ سندھ کی شوگر ملوں کی تیارکردہ سستی چینی کی صوبہ پنجاب میں ترسیل روکنے کیلئے خاطر خواہ انتظامات کیے جائیں۔ ایسوسی ایشن کے مطابق سندھ کی شوگرملیں 155روپے فی 40کلو گرام گنا خرید رہی ہیں جبکہ پنجاب میں ملیں حکومت کے مقرر کردہ ریٹ 180روپے فی 40کلو ادا کر رہی ہیں۔ سندھ کی ملوںکی چینی کی پیداواری لاگت پنجاب کی نسبت کم ہے ۔لہٰذا اس بات کا قوی امکان ہے کہ سندھ کی ملیں سستی چینی پنجاب میں ڈمپ کریں گی اس طرح سستی چینی کی پنجاب میں آمد سے چینی کی قیمتیں جو پہلے ہی دباﺅ کا شکار ہیں مزید کم ہونگی اور پنجاب کی ملیں چینی فروخت نہیں کر سکیں گی۔پاکستان شوگر ملز ایسوسی ایشن پنجاب نے چیف سیکریٹری سے مطالبہ کیا ہے کہ جب تک پورے ملک میں گنے کی قیمتیں برابر طے نہیں کی جاتیں سندھ کی چینی کی پنجاب میں ترسیل کو روکا جائے۔ترجمان نے حکومت پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ پنجاب کی شوگر ملوں کو مالی بحران سے بچانے کے لیے سندھ کی چینی کی نقل و حمل پر نظر رکھی جائے۔انہوں نے کہا کہ حکومت کی بے ربط پالیسی کی وجہ سے شوگر انڈسٹری کو چینی کی فا ضل پیداوار کی نکاسی کا مسئلہ درپیش ہے جس کی وجہ سے ملیں عالمی منڈی میں مقابلہ کرنے سے قاصر ہیں۔

 انہوں نے حکومت سے چینی کی عالمی منڈی میں قیمتوں کے تناسب سے سہولت کا مطالبہ کیا تاکہ فاضل چینی کی نکاسی ہو سکے۔

مزید :

کامرس -