یوحنا آباد میں اے پی ایم ایل اقلیتی ونگ کے کارکنوں میں راشن تقسیم

یوحنا آباد میں اے پی ایم ایل اقلیتی ونگ کے کارکنوں میں راشن تقسیم

  

لاہور( نمائند ہ خصوصی) آل پاکستان مسلم لیگ لاہور کے صدر منیر احمد سدھو نے کہا ہے کہ سابق صدر پاکستان اور آل پاکستان مسلم لیگ کے قائد سید پرویز مشرف کی دہشت گردی کے خاتمے کے حوالے سے جاری کردہ پالیسیوں اور ٹھوس م¶قف کی تائید اور حمایت 2007ءکے عام انتخابات کے بعد بھی کی جاتی تو پشاور میں تاریخ کی بدترین دہشت گردی کا سامنا نہ کرنا پڑتا۔ ایک ہفتہ گزر جانے کے بعد بھی پاکستان سمیت پوری دنیا اس ہولناک اور خوفناک دہشت گردی کے سوگ سے باہر نہیں نکل پائی اس امر کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز یوحنا آباد میں اقلیتی ونگ کے غریب کارکنان میں راشن کی تقسیم کے موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر اقلیتی ونگ پنجاب کے صدر یونس بھٹی سمیت دیگر رہنما اور کارکنان کی کثیر تعداد موجود تھی۔

۔

۔

۔

منیر احمد سدھو نے کہا کہ قومی المیہ ہے کہ 7 سال گزرنے کے بعد ہمارے حکمران اور سیاستدان دہشت گردوں کے خاتمے پر کمربستہ ہوکر سید پرویز مشرف کی پالیسی اور م¶قف کی حمایت میں ایک ایجنڈے پر متفق ہوچکے ہیں۔ اگر ان کا یہی فیصلہ سات سال پہلے ہوچکا ہوتا تو پاکستان کی سرزمین سے دہشت گردوں اور انتہا پسندوں کا خاتمہ ہوچکا ہوتا۔

مزید :

علاقائی -