ڈاکٹر شازیہ کے قتل کے الزام میں ساتھی ڈاکٹر کے خلاف مقدمہ درج

ڈاکٹر شازیہ کے قتل کے الزام میں ساتھی ڈاکٹر کے خلاف مقدمہ درج

  

لاہور(کرائم سیل)شیخ زید ہسپتال کے ہاسٹل میں جاں بحق ہونے والی ڈاکٹر شازیہ کے قتل کے الزام میں پولیس نے ساتھی ڈاکٹر کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے۔جبکہ متوفیہ کی نعش کو پوسٹ مارٹم کے بعد ورثا کے حوالے کر دیا گیا ہے۔پولیس کے مطابق متوفیہ کے بھائی محمد اسلم نے تھانہ مسلم ٹاﺅن میں دی گئی درخواست میں موقف اختیار کیا ہے کہ ڈاکٹر نعیم پہلے شادی شدہ ہونے کے باوجود اس کی بہن سے زبردستی شادی کرنا چاہتا تھا۔اس کے انکار پر وہ سیخ پا ہو گیااور اس کو زہر دے کر ہلاک کردےا۔ متوفیہ کی نعش کو پوسٹ مارٹم کے بعد ورثا کے حوالے کر دیا گیا جسے بعد ازاں اس کے آبائی شہر مظفر گڑھ میں لے جا کر سپرد خاک کر دیا گیا۔پولیس نے ڈاکٹر نعیم کو حراست میں لے کر اس سے پوچھ گچھ شروع کر دی ہے ۔اس کے علاوہ ڈاکٹر شازیہ کے پرس میں موجود نشہ آور انجکشن اور اس کے موبائل فون کا ریکارڈ لے کر بھی تفتیش کی جا رہی ہے۔

مزید :

علاقائی -