قائد اعظم کی مغربی معاشی نظام کے بارے میں کی گئی اہم پیشگوئی

قائد اعظم کی مغربی معاشی نظام کے بارے میں کی گئی اہم پیشگوئی
قائد اعظم کی مغربی معاشی نظام کے بارے میں کی گئی اہم پیشگوئی

  

کراچی(نیوزڈیسک)بابائے قوم قائداعظم محمد علی جناحؒ اسلام کو زندگی کے ہر شعبے کیلئے بہترین رہنمائی قرار دیتے تھے اور اسی طرح اسلامی معاشی نظام کو دنیا کی بقاءکیلئے لازم جبکہ مغربی معاشی نظام کو تباہی کا نسخہ قرار دیتے تھے۔

قائداعظمؒ کے زندگی کے چند اہم پہلو جاننے کیلئے کلک کریں

جولائی 1948ءمیں سٹیٹ بینک آف پاکستان کے افتتاح کے موقع پر انہوں نے اپنے خطاب میں دو ٹوک الفاظ میں مغرب کے معاشی نظام کو تباہ کن قرار دیا اور ایک فلاحی نظام کیلئے اسلام سے رہنمائی لینے کی تلقین کی۔ آپ نے فرمایا ”مغربی نظامِ معیشت نے لاینحل مسائل پیدا کردئیے ہیں اور اب اسے کوئی معجزہ ہی تباہی سے بچا سکتا ہے۔ یہ بنی نوع انسان کو انصاف فراہم کرنے اور اقوامِ عالم میں ٹکراﺅ ختم کرنے میں ناکام ہوچکا ہے۔ یہ دو عالمی جنگوں کا باعث بن چکا ہے اور اسے اپنا کرہم کبھی بھی ایک خوشحال اور مطمئن قوم نہیں بن سکتے۔ ہمیں دنیا کے سامنے ایک ایسا معاشی نظام پیش کرنا ہوگا جس کی بنیاد انسانی مساوات اور سماجی انصاف جیسے سچے اسلامی نظریات پر رکھی گئی ہو۔ اسی صورت میں ہم بطور مسلمان دنیا کو سماجی بہبود اور خوشحالی دینے کا مشن مکمل کرسکیں گے“۔

مزید :

بزنس -