ذاتی معلومات افشا کرنے پر 11ہزار افراد گرفتار

ذاتی معلومات افشا کرنے پر 11ہزار افراد گرفتار
ذاتی معلومات افشا کرنے پر 11ہزار افراد گرفتار

  



بیجنگ (آئی این پی ) چینی پولیس نے 2 برس کے دوران 3700مقدمات میں 11 ہزار مشتبہ افراد کو گرفتار کیا ہے، ان پر شہریوں کی ذاتی معلومات مبینہ طورپر غیر قانونی استعمال کرنے کا الزام ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق نیشنل پیپلز کانگرس کی قائمہ کمیٹی کے وائس چیئرمین وانگ شینگ جن نے قانون سازوں کو سائبر سپیس پروٹیکشن پر بریفنگ دیتے ہوئے بتایاہے کہ بعض مقامات پر انٹرنیٹ استعمال کرنے والوں کی ذاتی معلومات غیر قانونی طورپر استعمال کی گئیں جو چوری کر کے فروخت کی گئیں یا انہیں غلط طورپر استعمال کیا گیا ۔انہوں نے کہا کہ کچھ انٹرنیٹ کمپنیوں اور عوامی خدمات فراہم کرنے والے اداروں نے لوگوں کی ذاتی معلومات محفوظ کررکھی ہیں ،لوگوں کی ذاتی معلومات کے افشا کی وجہ سے دھوکہ دہی کے واقعات میں اضافہ ہوا ہے جس سے بڑی تعداد میں لوگ ہدف بنائے گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ یہ رپورٹ اگست اوراکتوبر کے درمیان تحقیقات کی بنیاد پر تیار کی گئی ہے ۔

دریں اثنا گذشتہ5 سال کے دوران ذرائع مواصلات کے آپریٹرز نے ایک کروڑ صارفین کی خدمات معطل کر دی ہیں جنہوں نے اپنے اصل نام کے ساتھ رجسٹریشن سے انکار کیا تھا۔وانگ شینگ جن نے تجویز پیش کی ہے کہ اس سلسلے میں ایک نئے قانون پر کام کی رفتار تیز کر دی جائے جس کے ذریعے شناخت کی تصدیق بہتر ہو سکے اور نگرانی کے نظام کو بھی موثر بنایا جا سکے تا کہ خلاف ورزی کرنیوالوں کو سخت سزا دی جاسکے ۔

لائیو ٹی وی دیکھنے کے لئے اس لنک پر کلک کریں

مزید : بین الاقوامی


loading...