حکومت نے کشکول توڑا نہیں اس کا سائز بڑا کردیا ہے ،سید بلال شیرازی

حکومت نے کشکول توڑا نہیں اس کا سائز بڑا کردیا ہے ،سید بلال شیرازی

  



لاہور(پ ر) پاکستان مسلم لیگ ق کے رہنما و مسلم لیگ یوتھ ونگ کے مرکزی صدر سید بلال مصطفی شیرازی نے کہا ہے کہ گزشتہ برسوں کی طرح اس سال بھی حکومت غیر ملکی قرضوں کے حصول کا ریکارڈ بنانے کی طرف جارہی ہے جبکہ رواں مالی سال کے پہلے 5ماہ میں ہی 5.2بلین ڈالرز کا قرضہ حاصل کرلیا گیا ہے جو سالانہ اندازسے دو تہائی زیادہ ہے جو خراب معاشی صورتحال کی نشاندہی کرتا ہے ۔حکومت معاشی میدان میں یکسر ناکام ہوچکی ہے وزیر خزانہ کی جعلی معاشی پالیسیوں سے ملک بدحالی کا شکار ہے برآمدات تیزی سے گر رہی ہیں جبکہ درآمدات میں اضافہ سے تجارتی خسارہ بڑھ رہا ہے اور حکومتی زرمبادلہ کے ذخائر میں تیزی سے کمی آرہی جس کے باعث حکومت قرضے حاصل کرنے والے اداروں کے دباؤں میں روپے کی قیمت میں کمی کرنے کی طرف گامزن ہے جس سے ڈالر کی قیمت میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے اور حکومتی بڑھتے ہوئے قرضوں میں بھی اربوں کا اضافہ ہورہا ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے مسلم لیگ ہاؤس میں یوتھ ونگ کے وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔سید بلال مصطفی شیرازی نے کہا کہ حکومتی معاشی پالیسیاں موثر نہ ہونے کے باعث غیر ملکی قرضوں کا بوجھ بڑھتا جارہا ہے رواں مالی سال 2017-18میں حکومت نے7.7بلین ڈالرز کے غیر ملکی قرضوں کا اندازہ لگایا تھا لیکن ایسا لگتا ہے کہ گزشتہ مالی سال کی طرح اس سال بھی یہ حد پہلے ہی عبور کرجائے گی اور بجٹ تک ہر پاکستانی ڈیڑھ لاکھ کا مقروض ہوجائے گا ۔ن لیگ کی حکومت نے برسراقتدارآتے ہی غیر ملکی قرضے نہ لینے اور کشکول توڑنے کا وعدہ کیا تھا۔کشکول تو نہ ٹوٹا لیکن کشکول کاسائز ضرور بڑا ہوگیا اور ہر پاکستان حتیٰ کہ پیدا ہونے والا بچہ بھی ڈیڑھ لاکھ سے زائد کا مقروض ہوگیا ہے

مزید : میٹروپولیٹن 1