پانی میں آرسینک کی مقدار میں خوفناک اضافہ ،مسلم لیگ ق کی تحریک التواء کار اسمبلی میں جمع

پانی میں آرسینک کی مقدار میں خوفناک اضافہ ،مسلم لیگ ق کی تحریک التواء کار ...

  



لاہور(پ ر) مسلم لیگ ق کی رکن صوبائی اسمبلی خدیجہ عمرفاروقی صدر پاکستان مسلم لیگ شعبہ خواتین پنجاب نے کہا ہے کہ صاف پانی کا حصول شہریوں کے لیے خواب بن گیا،لاہور کے شہری زہریلا پانی پینے لگے پانی میںآرسینک کی مقدار میں خوفناک اضافہ پر انہوں نے پنجاب اسمبلی میں تحریک التوائے کار جمع کروادی ۔اپنی تحریک التوائے کار میں انہوں نے کہا کہ شہر میں ٹیوب ویلوں سے حاصل کئے جانے والے پانی میں زہر آرسینک کی مقدر مقررہ حد10پی بی ایس سے بڑھ کر100پی بی ایس تک پہنچ گئی ہے ۔جراثیم ،زہر اور کثافتوں سے پاک پانی کی شہریوں کو فراہمی کا ذمہ دار واسا اس ضمن میں کوئی قابل قدر کارکردگی نہیں دکھاسکا۔خدیجہ فاروقی نے کہا کہ لاہور سمیت پنجاب بھر کے شہریوں کے لیے پینے کے صاف پانی کی فراہمی ایک گھبیر مسئلہ بن چکا ہے پینے کے پانی میں زہر آرسینک کی زیادہ مقدار والے پانی کے استعمال سے گردے فیل ہوجاتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ماہرین کے مطابق آرسینک خطرناک زہر ہے جسے ہاتھ پر رکھا جائے تو زخم بن جاتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اگرچہ واسا نے متعدد مقامات پر فلٹریشن پلانٹ بھی نصب کیے ہیں لیکن ان کا انتظام پرائیویٹ کمپنی کے ہاتھ میں ہے اور ان پلانٹ میں جعلی فلٹراستعمال کرنے کی شکایات سامنے آرہی ہیں انہوں نے کہا کہ واسا اور متعلقہ محکمے لاہوربھر میں عوام کو سپلائی ہونے والے پانی اور اس میں آرسینک کی مقدار کی بات پنجاب اسمبلی ایوان میں رپورٹ پیش کریں کیونکہ 2011میں آخری مرتبہ پانی کے سیمپل لیے گئے تھے اس کے بعد آج تک سیمپل لینے اور چیکنگ کوئی نظام وضع نہ کیا جاسکااور صاف پانی کی فراہمی عوام کے لیے خواب بن گیاہے۔اسمبلی ایوان کو بتایا جائے کہ عوام کو صاف پانی کی فراہمی کب تک شروع کی جائے گی اور متعلقہ محکمے کیا اقدامات کررہے ہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...