غالب مارکیٹ، پولیس نے کم عمرلڑکی کی جبراً شادی رکوا دی

غالب مارکیٹ، پولیس نے کم عمرلڑکی کی جبراً شادی رکوا دی

  



لاہور(خبرنگار)تھانہ غالب مارکیٹ کے علاقے میں 14سالہ لڑکی کی مبینہ جبری شادی کی کوشش، شادی کی اطلاع ملنے پر متعلقہ پولیس نے موقع پر پہنچ کرمعاملے کی تحقیقات شروع کردی گئیں۔تفصیلات کے مطابق غالب مارکیٹ پولیس کو 15 پر کال موصول ہوئی کہ حسین آباد کے علاقے میں 14 سالہ لڑکی ثانیہ کی راولپنڈی کے 32 سالہ لڑکے سے مبینہ جبری شادی کرائی جارہی ہے جس پر پولیس نے شادی والے گھر پہنچ کر شادی رکوا دی ۔پولیس کے بارہا مطالبے پر 3 گھنٹے بعد اہل خانہ نے مدرسہ چھوڑنے کا سرٹیفیکیٹ دیا جس کے مطابق اس کی عمر 16 سال 5 ماہ ہے۔ دلہن ثانیہ نے پولیس کو بتایا کہ شادی اس کی رضامندی سے ہورہی ہے دوسری جانب لڑکی کے باپ نے کہا کہ 15 پر کسی نے جھوٹی اطلاع دی ہے ایس ایچ او غالب مارکیٹ عاطف کا کہنا تھا کہ تمام حالات کی رپورٹ افسران کو دے دی ہے۔پولیس کے مطابق واقع کی اطلاع سلیم کے داماد یاسر نے پولیس کو دی تھی جس پر کاروائی کی گئی

مزید : علاقائی


loading...