فاٹا کے انضمام کافیصلہ عوام کی اکثریتی رائے کے مطابق کیا جائے : فضل الرحمان

فاٹا کے انضمام کافیصلہ عوام کی اکثریتی رائے کے مطابق کیا جائے : فضل الرحمان

  



ڈیر ہ اسماعیل خان (این این آئی)جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ فاٹا کے انضمام کے معاملہ پر شخصی اور مفاداتی بیانیہ کی بجائے قبائل کے بہتر اور تابناک مستقبل کو بنیاد بنا کر کئے جانے والے فیصلے سے ہی ملک کا وقار اور قبائل کا مفاد وابستہ ہے۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے معروف دینی درسگاہ جامعہ نعمانیہ میں علما اور جمعیت علمائے اسلام کے راہنما حاجی عبداللہ شاہ جہان کی والدہ کی وفات پر فاتحہ کے موقع پر معززین علاقہ سے گفتگو کے دوران کیا۔ انہوں نے کہا کہ جلد بازی اور تمام تر آئینی رکاوٹیں پھلانگنا معقول عمل نہیں بلکہ طریقے اور سلیقے سے اس عمل کو انجام دیا جائے،فاٹا میں کسی حد تک انضمام کی حمایت ہے تو اس سے بڑھ کر مخالفت بھی ہے فاٹاکے اندرالگ صوبے اور پرانانظام جاری رکھنے کی بھی تحریک ہے اس لیے جمہوری طریقہ اپناتے ہوئے عوام کی اکثریت کے مطابق فیصلہ کیا جائے۔ بعد ازاں تین سو سے زائد قبائلی عمائدین کے جرگہ نے مولانا فضل الرحمان سے ملاقات کی اور فاٹا مسئلے پر انکے موقف کو قبائل صوبہ خیبر پختونخواہ اور پاکستان کے مفاد کے عین مطابق قرار دیا۔ مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ جبراور زبردستی کے بجائے جمہوری طریقہ اختیار کریں۔ ہم اس معاملہ میں فاٹا سپریم کونسل کے فیصلے کی حمایت کرتے ہیں۔

فضل الرحمن

مزید : علاقائی


loading...