حادثات: ایک ہی خاندان کے 4افراد سمیت 8جاں بحق، نوجوان قتل

حادثات: ایک ہی خاندان کے 4افراد سمیت 8جاں بحق، نوجوان قتل

  



عبدالحکیم، باگڑ سرگانہ، کوٹ اسلام، کبیروالا، اڈا کوٹ بہادر، رحیم یار خان، خانپور، جتوئی ، گگومنڈی (نمائندگان) ٹریفک کے مختلف حادثات میں ایک ہی خاندان کے 4 افراد سمیت 8 افراد(بقیہ نمبر15صفحہ12پر )

زندگیوں سے محروم ہوگئے خاتون کے اغواء کا بدلہ لینے کیلئے مخالفین نے ایک شخص کو موت کے گھاٹ اتار دیا کمسن بچہ حادثاتی موت کا شکار ہو گیا عبدالحکیم سے نمائندہ پاکستان، سٹی رپورٹر باگڑ سرگانہ سے نمائندہ پاکستان، کوٹ اسلام سے نمائندہ پاکستان، کبیروالا سے نامہ نگار اور اڈا کوٹ بہادر سے نمائندہ پاکستان کیمطابق نواحی علاقہ باگڑ پل میں ٹرلر اور کار کے مابین تصادم کے نتیجے میں ایک ہی خاندان کے 4افراد جاں بحق اور 2زخمی ہوگئے،ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ عبدالحکیم کے رہائشی محمد سلطان سیال اپنی ہمشیرہ ، والدہ ، بیٹا ،رشتہ داررضیہ بی بی زوجہ رمضان کے ہمراہ ملتان میں قریبی عزیز کی فوتیدگی سے تعزیت کرکے عبدالحکیم واپس آرہے تھے کہ پل باگڑ کے نزدیک ٹرالر سے ٹکراگئے جس کے نتیجہ میں محمد سلطان سیال خود،فاطمہ بی بی والدہ،مریم بی بی ہمشیرہ اورقمرسلطان بیٹے سمیت موقع پر جاں بحق ہوگئے جبکہ ہمراہی خاتون رضیہ بی بی اور ایک7سالہ بچہ زخمی ہوگئے۔ متوفی گاڑی خود چلا رہا تھا،حادثے کے نتیجے میں کار کے پرخچے اڑ گئے۔ رحیم یار خان سے بیورونیوز کیمطابق پہلا حادثہ رحیم آباد کے رہائشی 25سالہ نوجوان نادر خان کے ساتھ پیش آیا جو اپنی موٹرسائیکل پرسوار ہوکر جارہاتھا کہ اچانک سڑک پرآجانے والے کتے کو بچاتے ہوئے بے قابو ہوکر سڑک پر جاگرا اور شدید زخمی ہوگیا جبکہ دوسرا حادثہ روجھان کے رہائشی 38سالہ طور گُل کے ساتھ پیش آیا جو اپنے ساتھی حبیب اللہ کے ہمراہ کار پر جارہاتھا کہ سامنے سے آنیوالے ٹرک سے بے قابو ہوکر ٹکراگئے جس کے نتیجہ میں طور گُل اور حبیب اللہ شدید زخمی ہوگئے۔ ورثاء نے طبی امداد کے لئے شیخ زید ہسپتال رحیم یارخان منتقل کردیاجہاں طبی امداد کے باوجود نوجوان نادر خان اور طور گُل جانبر نہ ہوپائے اور زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑگئے خان پور سے تحصیل رپورٹر اور نامہ نگار کیمطابق ایک ہی روز میں ٹریفک کے چار مختلف حادثات میں ماں بیٹا جاں بحق جبکہ سات افراد زخمی ، تمام حادثات میں موٹر سائیکل ٹکرائے ،ظاہر پیر روڈ پر کوٹلہ پٹھان کے قریب موٹر سائیکل ٹریکٹر ٹرالی سے ٹکراگئی جس سے چار سالہ عبید اور اس کی والدہ شاہینہ موقعہ پر دم توڑ گئی جبکہ شاہینہ کا بھائی شدید زخمی ہوگیا ،جاں بحق ہونے والی خاتون فاضل پور کی رہائشی تھی اور ماڑی اللہ بچایا میں اس کے سسرال ہیں ، اسی طرح ظاہر پیر روڈ پر ہی دو موٹر سائیکل مائی والی مسجد کے قریب آپس میں ٹکرا گئے جس سے دو افراد غلام مصطفےٰ اور عزیز مائی زخمی ہوگئے ، سٹلائٹ ٹاؤن میں مسجد رحمٰن کے قریب دو موٹر سائیکل ٹکرانے سے کاشف اور ایک شخص زخمی ہوئے ، گڑھی اختیار خان روڈ پر د موٹر سائیکل ٹکرانے سے بھی دو افراد شریف اور ریاض جوکہ رکن پور کے رہائشی ہیں شدید زخمی ہوگئے ، ان تمام حادثات میں 1122کی ٹیموں نے موقعہ پر پہنچ کر زخمیوں کو طبی امداد دی اور انہیں تحصیل ہیڈ کواٹر ہسپتال پہنچایا جتوئی سے نمائندہ پاکستان کیمطابق نواحی بستی چاہ کھمبی والا موضع جنگل کے رہائشی غلام عباس نے بتایا کہ رات نوبجے میرے بھتیجوں کے ڈیرے پر کتوں کے بھونکنے کی آواز آئی جس پر میں اس طرف گیا اسی دوران میرے بھتیجے محمد یامین اور غلام یسٰین ڈیرے سے باہر آگئے اس اثنا میں نزدیکی کھیت میں پانی لگائے ہوئے ظفر حسین بھی موقع پر آگئے ہمارے دیکھتے ہی دیکھتے محمد قاسم نے للکارا کہ غلام یسیٰن نے محمد آصف کی بھابی عاصمہ بی بی کو اغوا کیا تھا آج بچ کرجانے نہ پائے اسی دوران ملزمان خادم حسین مسلح پسٹل،محمد فاروق مسلح پسٹل،قاسم خالی ہاتھ،محمد آصف مسلح پسٹل اور دوکس نامعلوم نے اندھا دھند فائرنگ شروع کردی جس سے ایک ننھے بچے کا باپ محمد یامین شدید زخمی ہوگیاملزمان اندھا دھند ہوائی فائرنگ کرتے ہوئے فرار ہوگئے جب ہم نے اس سنبھالا تو وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے موقع پر ہی جاں بحق ہوچکے تھے جتوئی پولیس نے ملزمان کے خلاف کاروائی شروع کردی ہے اس موقع پر ہومی سائیڈ سب انسپکٹر رب نواز خان چانڈیہ نے بتایا کہ ہم نے سردست مدعی فریق کی رپورٹ پر مقدمہ درج کرلیا ہے تاہم مقدمے کی تفتیش صرف اور صرف میرٹ پر ہوگی کوئی گنہگار قانون سے بچ نہ پائے گا اور کوئی بے گناہ بلاوجہ چالان نہ ہوگا ۔ گگومنڈی سے نامہ نگار کیمطابق شمس بلاک کی رہائشی سکول ٹیچر اپنی ڈیوٹی پر گئی ہوئی تھی اور اس کے بچے گھر میں دادی کے پاس موجود تھے اور اسی دوران بچے چھت پر گیند سے کھیلنے میں مصروف ہو گئے اور کھیلتے ہوئے گیند باہر سڑک پر گر گئی جسے اٹھانے کے لیے دو سالہ بچہ عبدالمعین ولد سعود احمد نے سر گرل سے باہر نکالا تو اس کا سر گرِ ل میں پھنس گیا جس کی اطلاع دوسرے بچے نے صحن میں موجود اہل خانہ کو دی لیکن ان کے چھت پر پہنچنے سے قبل بچہ دم توڑ چکا تھا ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...