دنیا بھر میں لاکھوں سانپ اچانک مرنے لگے، لیکن کیوں۔۔۔ وجہ جان کر انسان بھی کانپ اُٹھیں

دنیا بھر میں لاکھوں سانپ اچانک مرنے لگے، لیکن کیوں۔۔۔ وجہ جان کر انسان بھی ...
دنیا بھر میں لاکھوں سانپ اچانک مرنے لگے، لیکن کیوں۔۔۔ وجہ جان کر انسان بھی کانپ اُٹھیں

  



لندن(نیوز ڈیسک)سانپ جیسے خطرناک جانور کی موت پر بظاہر تو انسان کو فکر مند ہونے کی کوئی ضرورت نظر نہیں آتی لیکن اگر سانپ دنیا بھر میں اور لاکھوں کی تعداد میں مرنا شروع ہو جائیں تو یہ ضرور فکر کی بات ہے۔ سائنسدان آج کل کچھ ایسی ہی فکر میں مبتلاءہیں کیونکہ ایک پراسرار بیماری دنیا بھر میں سانپوں کی موت کا سبب بن رہی ہے۔

ویب سائٹ ’پاپولر مکینکس‘ کے مطابق بیماری بڑے پیمانے پر پھیل رہی ہے اور سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ اگر جلد ہی اس مسئلے کا کوئی حل دریافت نہ ہوا تو دنیا بھر میں سانپوں کی نسل خطرے میں پڑ جائے گی ، جو کہ ہمارے ایکوسسٹم کے لئے بھی ایک بڑا خطرہ ہوگا۔

وہ جانور جس کا جگرکھانے سے انسان کے پورے جسم سے جلد اُتر جاتی ہے

سانپوں کی اس بیماری کا نام ’سنیک فنگل ڈیزیز (ایس ایف ڈی)‘ ہے اور یہ ایک پھپھوندی ’اوفی ڈیو مائیسیس اوفی ڈیو ڈیکالو‘ کی وجہ سے پیدا ہوتی ہے۔ جس سانپ کو یہ بیماری لاحق ہوجائے اس کی جلد پھٹنے لگتی ہے اور اس میں انفیکشن ہوجاتے ہیں جس کے نتیجے میں کچھ ہی عرصے میں سانپ کی موت ہوجاتی ہے۔

لائیو ٹی وی پروگرامز، اپنی پسند کے ٹی وی چینل کی نشریات ابھی لائیو دیکھنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

سائنسی جریدے ’سائنس ایڈوانسز‘ میں شائع ہونے والی تحقیق کے مطابق یہ بیماری پہلے تو صرف شمالی امریکہ میں پائی جاتی تھی لیکن اب دنیا کے مختلف حصوں میں سانپ اس کا نشانہ بناتے نظر آرہے ہیں۔ یہ بیماری سانپوں کی کسی ایک نسل تک محدود نہیں ہے بلکہ کسی بھی نسل کے سانپ اس سے متاثر ہوسکتے ہیں۔ سائنسدان اس بیماری کو سمجھنے کے لئے کوشاں ہیں لیکن تاحال کوئی قابل ذکر کامیابی نہیں مل سکی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس