اپنوں کے درمیان ایک منفرد سفرنامہ

اپنوں کے درمیان ایک منفرد سفرنامہ

  

کہتے ہیں کہ دنیا ایک حیرت کدہ ہے لیکن جمہور کی بھاری اکثریت کے پاس حیران ہونے کے لئے نہ وقت ہے نہ بخت اور نہ ہی سکت۔ جب جمہور کی اکثریت کو روٹی سے فرصت نہ ہو جن کا توا پرات اوندھا پڑا ہو وہ کائنات کی رنگینیاں دیکھنا تو کیا ان پر غور کرنے کا بھی نہیں سوچ سکتے جن میں سے کسی کسی کا گزارہ ہے اور اکثر بے سہارا۔ حالات کی انہی تلخیوں میں ہمارے ہر دل عزیز، جو علم و دانش کے پیکر، لیل و نہار کی تمام رعنائیاں اپنے دیس کو لوٹانے کی جہد مسلسل میں مصروف عمل ہیں۔

قانون کے ساتھ ساتھ تعلیم کا محافظ میاں محمد آصف (ایڈیشنل انسپکٹر جنرل پولیس خیبرپختونخوا) جو فرض کو قرض سمجھ کر ادا کررہے ہیں گزشتہ دنوں ان کے دورہ امریکہ پر مشتمل خوبصورت سفرنامہ ’’اپنوں کے درمیان‘‘ محبت بھرے اخلاص کے ساتھ موصول ہوا جس کو پڑھنے کے بعد ان کی ماہیت قلبی پیار اور اخلاص میں گوندھی ہوئی شخصیت، ان کا موثر اور منفرد اسلوب بیان اور اختصار کے ساتھ اپنی بات کہنے کا ہنر ان کی دیگر صلاحیتوں سے بڑھ کر ہم کو متاثر کر گیا۔ ’’اپنوں کے درمیان‘‘ وطن عزیز کی محبتیں بکھیرتا منفرد شاہکار ہے جس میں عام سفرنامہ نگاروں کی طرح خوامخواہ کا ہیجان اور رومانیت موجود نہیں ہے۔ اپنوں سے حقیقی رومان، روحانیت اور حقائق کی منظر کشی نے میاں محمد آصف کی تحریر کو ایک منفرد مزاج کی تحریر بنا دیا ہے۔ سفرنامہ میں جہاں امریکی ترقی کی جھلک دکھاتے ہیں وہیں وہ اس بات پر بھی نوحہ کناں ہیں کہ ہم نے تعلیمی میدان میں سنجیدگی کا مطاہرہ نہیں کیا۔ میاں محمد آصف چونکہ صوبہ خیبرپختونخوا میں ایڈیشنل آئی جی پولیس ہیں اس حوالے سے وہ امریکہ میں مقیم پاکستانیوں کے اضطراب اور کشمکش کا مدلل جواب دیتے اور تارکین وطن کی وطن عزیز سے محبت کو جلا بخشتے نظر آتے ہیں۔ انہوں نے سفر امریکہ میں ہر وہ اچھی چیز نہایت آسان الفاظ میں بیان کر دی کہ جس پر عمل کرکے ہم خود کو اوروطن عزیز کو سنوار سکتے ہیں اور ترقی کی تمام منازل طے کر سکتے ہیں۔ اور دوسری طرف امریکی سامراجیت کے مختلف انداز اور اطوار کو بھی خوب بیان کیا ہے۔

میاں آصف نے امریکی معاشرت کا بڑی خوبصورتی اور متوازن انداز میں موازنہ کیا ہے اور کیا خوب کیا ہے جومبالغہ آرائی اور اعدادوشمار کی جادوگری سے قطعاً پاک ہے۔ اپنوں کے درمیان میں مستنصر حسین تارڑ، سلمیٰ اعوان، ڈاکٹر اجمل نیازی، میجر جنرل عاصم سلیم باجوہ(ڈی جی آئی ایس پی آر) اسلم کمال، محمد آصف جلالی، ناصر علی سید، اوریا مقبول جان، ارشاد احمد عارف، رحیم اللہ یوسف زئی، شیراز لطیف، ڈاکٹر ہارون الرشید، ڈاکٹر محمد افتخار کھوکھر، فہیم صدیقی، آصف بٹ، عابد حسین قریشی، پروفیسر صباحت حسین اور ڈاکٹر محمد اسلم ڈار جیسے سکہ بند اور مختلف الخیال لوگوں کی آرا پڑھنے سے تعلق رکھتی ہیں جو قارئین کے دل کو چھوتی ہوئی اور سفرنامہ کے متعلق بہترین آرا ہیں۔ ہماری دعا ہے کہ اللہ تعالیٰ میاں محمد آصف کی پیشہ وارانہ صلاحیتوں کے ساتھ ساتھ ان کی ادبی اور علمی صلاحیتوں کو بھی وطن عزیز کی ترقی اور جمہور کی حقیقی ترقی کے لئے سرفراز کرے۔آمین

مزید :

کالم -