نئے دسعودی فرمانروا کی قیادت میں مصالحت کے قوی امکانات موجود ہیں، سابق ایرانی صدر

نئے دسعودی فرمانروا کی قیادت میں مصالحت کے قوی امکانات موجود ہیں، سابق ...

  

 تہران(اے پی پی) ایران کی مصالحتی کونسل کے چیئرمین اور سابق صدر علی اکبر ہاشمی رفسنجانی نے کہا ہے کہ کے نئے سعودی فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی قیادت میں سعودی عرب کے ساتھ ایران کی مصالحت کے قوی امکانات موجود ہیں۔ اپنے ایک انٹرویو میں کونسل کے سربراہ نے سعودی عرب کے مرحوم فرمانروا شاہ عبداللہ بن عبدالعزیزکی خدمات کو سراہا اور ان سے ہونے والی اپنی ملاقاتوں کا فخریہ انداز میں ذکر کیا۔ ہاشمی رفسنجانی نے کہا کہ موجودہ خادم الحرمین الشریفین کے ساتھ ایران کی مفاہمت کے قوی امکانات موجود ہیں۔ میرے ان کے ساتھ اس وقت کے برادرانہ تعلقات قائم ہیں جب وہ ریاض کے گورنر تھے۔انہوں نے تسلیم کیا کہ دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات میں کشیدگی شام، لبنان اور یمن کی موجودہ صورت حال کا نتیجہ ہے تاہم یہ اختلافات ایسے نہیں کہ انہیں دور نہ کیا جا سکے۔انھوں نے کہا کہ ماضی میں بھی دونوں ملکوں کے درمیان اس نوعیت کے اختلافات رہے ہیں تاہم ان کے دور حکومت میں دونوں برادر ملک ایک دوسرے کے بہت قریب آ گئے تھے۔علی اکبر ہاشمی رفسنجانی نے شاہ سلمان سے ماضی میں ہونے والی ایک ملاقات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ سلمان بن عبدالعزیز نے بہت پہلے دونوں ملکوں کے درمیان مضبوط تعلقات کے قیام کی ضرورت پر زور دیا تھا۔

مزید :

عالمی منظر -