روس مشرقی یوکرین میں باغیوں کی امداد نہیں کر رہا، پیوٹن

روس مشرقی یوکرین میں باغیوں کی امداد نہیں کر رہا، پیوٹن

  

ماسکو (اے پی پی) روس کے صدر ولادی میرپیوٹن نے کہا ہے کہ روس مشرقی یوکرین میں باغیوں کی امداد نہیں کررہا۔ انہوں نے منسلک میں طے پانے والے جنگ بندی کے معاہدے کی حمایت کرتے ہوئے اسے مشرقی یوکرین میں استحکام کا بہترین طریقہ قرار دیا۔ روسی صدر پیوٹن نے ٹی وی انٹرویومیں کہا کہ ہمسایہ ملک یوکرین سے جنگ ’’بعیداز قیاس‘‘ ہے۔ انہوں نے کہا کہ منسلک میں طے پانے والے جنگ بندی کے معاہدے پرعملدرآمد کیا جائے تو مشرقی یوکرین میں بتدریج استحکام پیدا ہوجائے گا۔ روسی صدر نے کہا کہ روس مشرقی یوکرین میں امن کیلئے اتنی ہی دلچسپی رکھتا ہے جتنا یورپ ممالک رکھتے ہیں اورکوئی بھی اپنی دہلیز پر تنازعہ بالخصوص مسلح تنازعہ نہیں چاہتا۔ واضح رہے کہ قبل ازیں18 فروری کو روسی صدر ولادی میر پیوٹن نے مشرقی یوکرین میں جنگ بندی کے معاہدے کے باوجود لڑائی کے جاری رہنے کا خدشہ ظاہرکیا تھا تاہم انہوں نے کہا ہے کہ گذشتہ ہفتے ہونے والے جنگ بندی کے معاہدے کے بعد سے لڑائی کی شدت میں واضح کمی ہوئی ہے۔

مزید :

عالمی منظر -