سینیٹ انتخابات کو شفافبنانا حکومت کی بنیادی ذمہ داری ہے،وسیم اختر

سینیٹ انتخابات کو شفافبنانا حکومت کی بنیادی ذمہ داری ہے،وسیم اختر

  

 لاہور(پ ر) امیر جماعت اسلامی صوبہ پنجاب و پارلیمانی لیڈر صوبائی اسمبلی ڈاکٹر سید وسیم اختراور سیکرٹری جنرل نذیر احمد جنجوعہ نے کہاہے کہ سینیٹ انتخابات کوشفاف بناناحکومت کی بنیادی ذمہ داری ہے ہارس ٹریڈنگ کوروکنے کے لئے سنجیدگی سے اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔     سینیٹ الیکشن میں پیسے کے استعمال کی خبریں آئے روز الیکٹرانک وپرنٹ میڈیا کی شہ سُرخیوں کی زینت بنتی رہتی ہیں۔ضرورت اس امر کی ہے کہ وزیراعظم نوازشریف ملک میں قانون کی بالادستی کویقینی بناتے ہوئے ہارس ٹریڈنگ میں ملوث افراداورنمائندگان کوتاحیات نااہل قراردیں۔    کوئی بھی شخص آئین وقانون سے باہر نہیں ہوناچاہئے انہوں نے کہاکہ رشوت کابازارگرم ہے اوپر سے لے کر نیچے تک کرپٹ عناصر کاراج ہے۔ملک میں جس کی لاٹھی اس کی بھینس کاقانون رائج ہے۔امیر کو توقع سے زیادہ اور غریب کو ضرورت سے بھی کم ملتاہے۔عوام کوریلیف فراہم کرنے کے حکومتی دعوے ایک ایک کرکے ریت کی دیوار ثابت ہورہے ہیں۔ڈاکٹرسیدوسیم اخترنے مزیدکہاکہ جب تک پاکستان کی سیاست سے روپے پیسے کاعمل دخل مکمل طور پرختم نہیں ہوجاتا ملک کوحقیقی معنوں میں مخلص اور محب وطن قیادت میسرنہیں آسکتی۔سینیٹ انتخابات کے طریقہ کارکوبدلنے اورانتخابات اوپن کرانے کے لئے آئینی ترمیم کرانے کاحکومتی فیصلہ اس وقت تک مفید اور کارآمد نہیں ہوسکتا جب تک ہارس ٹریڈنگ کی لعنت کوہمیشہ کے لئے ختم نہیں کردیا جاتا۔انہوں نے کہاکہ وسائل سے مالامال ملک میں مخلص اور دیانتدار لیڈرشپ کی کمی نہیں ہے اہل اور باصلاحیت قیادت کو آگے بڑھاناچاہئے۔        ۔ عوامی نمائندوں کی ووٹوں کی خریدوفرخت میں ملوث ہونے کی اطلاعات بھی ہر انتخابات میں سنائی دیتی ہیں مگرافسوس ناک امر یہ ہے کہ اس گھناؤنے جرم کی روک تھام کے لئے سنجیدگی سے اقدامات نہیں کئے جاتے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -