ایڈووکیٹ جنرل پنجاب محمد حنیف کھٹانہ نے عہدہ سے استعفیٰ دے دیا

ایڈووکیٹ جنرل پنجاب محمد حنیف کھٹانہ نے عہدہ سے استعفیٰ دے دیا

  

لاہور(سعید چودھری )ایڈووکیٹ جنرل پنجاب محمد حنیف کھٹانہ نے اپنے عہدہ سے استعفی ٰ دے دیا ہے۔ پنجاب حکومت نے انہیں سینئر ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کے طور پر کام کرنے کی پیش کش کی ہے تاہم محمد حنیف کھٹانہ نے یہ پیش کش قبول کرنے سے معذرت کرلی ہے ۔محمد حنیف کھٹانہ کا استعفی ٰ وزیر اعلیٰ سیکریٹریٹ کو موصول ہوگیا ہے تاہم ابھی تک اسے منظور نہیں کیا گیا ،امکان ہے آئندہ ایک دو روز میں اس استعفی ٰ کی منظوری کے بعد نوید رسول مرزا کی ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کے طور پر تعیناتی کا نوٹیفکیشن جاری کیا جائے گا ۔محمد حنیف کھٹانہ 7دسمبر1999کو ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کے طور پر اس دفتر سے وابستہ ہوئے تھے ،جولائی2014میں انہیں ایڈووکیٹ جنرل پنجاب مقرر کیا گیا ،یوں انہوں نے 15سال سے زائد عرصہ ایڈووکیٹ جنرل آفس میں گزاراجو کہ ایک ریکارڈ ہے ۔ممکنہ نئے ایڈووکیٹ جنرل نوید رسول مرزا جنرل (ر)پرویز مشرف کے دور حکومت میں پراسیکیورٹر جنرل نیب رہ چکے ہیں ،وہ سپریم کورٹ کے سابق جج منور مرزا مرحوم کے برادرنسبتی اور سپریم کورٹ کے جسٹس عمر عطاء بندیال کے ماموں ہیں۔ حنیف کھٹانہ

مزید :

صفحہ آخر -