حکومت کی ریڈیو ٹیکس لگانے کی تیاریاں ، گاڑی مالکان ہوشیار، پی اے سی کی موبائل فون پر ٹیکس لگانے کی مخالفت

حکومت کی ریڈیو ٹیکس لگانے کی تیاریاں ، گاڑی مالکان ہوشیار، پی اے سی کی موبائل ...
حکومت کی ریڈیو ٹیکس لگانے کی تیاریاں ، گاڑی مالکان ہوشیار، پی اے سی کی موبائل فون پر ٹیکس لگانے کی مخالفت

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان براڈکاسٹنگ کارپوریشن اورحکومت نے ریڈیو ٹیکس لگانے کی تیاریاں شروع کردی ہیں جس کے تحت نئی گاڑی کی رجسٹریشن پر چار ہزار روپے وصول کیے جائیں گے تاہم موبائل فون پر سیس کے نام سے ریڈیو ٹیکس لگانے کی تجویز زیرغور ہے لیکن پبلک اکاﺅنٹس کمیٹی نے موبائل فون پرٹیکس لگانے کی مخالفت کردی ۔

تفصیلات کے مطابق پبلک اکاﺅنٹس کمیٹی کے اجلاس کے دوران ڈی جی ریڈیو عمران گردیزی نے بریفنگ میں بتایاکہ پاکستان براڈکاسٹنگ کارپوریشن مالی مسائل کا شکارہے ، آمدن صرف 33کروڑروپے ہے ، آمدن بڑھانے کے لیے پلان تیار کرلیاہے ،گاڑی اورموبائل فون رکھنے والے شہری ریڈیو سنتے ہیں ، ریڈیو ٹیکس لگانے کی نئی تجاویز زیرغور ہیں جن میں نئی گاڑی کی رجسٹریشن پر چار ہزارروپے ریڈیو ٹیکس اور موبائل فون صارفین سے’ سیس ‘کے نام پر ریڈیو ٹیکس لگانے کی تجاویز شامل ہیں ۔

پبلک اکاﺅنٹس کمیٹی کے اراکین نے موبائل فون پر ٹیکس لگانے کی مخالفت کردی اور کمیٹی کے رکن انوارچوہدری نے کہاکہ موبائل فون غریب عوام بھی استعمال کرتے ہیں ، موبائل فون پر ٹیکس لگانا سراسر عوام سے زیادتی ہوگی ۔

محمود خان اچکزئی نے ریڈیو پاکستان کی کارکردگی پر حکام کی سرزنش کی اور دوماہ میں کارکردگی رپورٹ طلب کرلی ۔

مزید :

بزنس -Headlines -