اکبر بگٹی قتل کیس، سابق صدر کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست منظور، حکومت سندھ سیکیورٹی فراہم کرے: عدالت

اکبر بگٹی قتل کیس، سابق صدر کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست منظور، حکومت سندھ ...
اکبر بگٹی قتل کیس، سابق صدر کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست منظور، حکومت سندھ سیکیورٹی فراہم کرے: عدالت

  

کوئٹہ (مانیٹرنگ ڈیسک) اکبر بگٹی قتل میں انسداددہشتگردی کی عدالت نے سابق فوجی صدر پرویز مشرف کی ایک دن کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست منظور کرلی اور حکومت سندھ کو حکم دیاکہ پرویز مشرف کو میڈیکل بورڈ کے سامنے پیش ہونے کے لئے سیکیورٹی فراہم کی جائے جبکہ پرویز مشرف کے بطوررہنماءعدالت میں پیشی سے متعلق درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیاگیا۔

کوئٹہ میں انسداد دہشت گردی کی عدالت کے جج آفتاب احمد لون نے نواب اکبر بگٹی قتل کیس کی سماعت کی۔سماعت کے دوران سابق وفاقی وزیر داخلہ آفتاب شیرپاو¿ اور سابق صوبائی وزیر داخلہ شعیب نوشیروانی عدالت میں پیش ہوئے تاہم سابق صدر پرویز مشرف ایک مرتبہ پھر عدالت میں حاضر نہیں ہوئے۔

پرویز مشرف کے وکیل اختر شاہ نے اپنے موکل کی عدالت میں حاضری سے استثنیٰ کی درخواست کی، درخواست پر عدالت نے سابق صدر کے وکیل سے استفسار کیا کہ وہ اپنے موکل کو عدالت میں کب پیش کریں گے جس پر اختر شاہ ایڈووکیٹ نے جواب دیا کہ میڈیکل بورڈ کی رپورٹ کے بعد عدالت کے حکم پر ان کے موکل پیش ہوجائیں گے،آج تک پرویز مشرف کو پرکوئی الزام ثابت نہیں ہوسکا۔ انہوں نے عدالت سے اپیل کی کہ پرویز مشرف کو میڈیکل بورڈ کے سامنے پیش ہونے کے لئے سیکیورٹی فراہم کی جائے اور عدالت میں ”ملزم ‘کے بطور رہنماءپیشی کی درخواست کردی جس پردلائل سننے کے بعد عدالت نے فیصلہ محفوظ کرلیا۔

دوران سماعت سابق وزیرداخلہ آفتاب شیرپاﺅ اور شعیب نوشیروانی کے وکلاءنے دلائل مکمل کرلیے ۔

 عدالت نے پرویز مشرف کو حاضری سے ایک روز کا استثنیٰ دیتے ہوئے سندھ حکومت کو انہیں میڈیکل بورڈ کے سامنے پیش ہونے کے لئے سیکیورٹی فراہم کرنے کا حکم دے دیا۔

سماعت کے دوران ڈی جی صحت بلوچستان ڈاکٹر فاروق اعظم نے عدالت کو بتایا کہ پرویز مشرف کے طبی معائنے کے لئے سندھ او ربلوچستان میں میڈیکل بورڈ تشکیل دے دیا گیا ہے۔

ملزمان کی عدم پیشی اور بدھ کی سماعت مکمل ہونے پر عدالت نے مزید سماعت سماعت 17مارچ تک ملتوی کردی ۔

مزید :

کوئٹہ -