فحش فلم کا اثر، یونیورسٹی کے طالبعلم کی ہم جماعت طالبہ کے ساتھ درندگی

فحش فلم کا اثر، یونیورسٹی کے طالبعلم کی ہم جماعت طالبہ کے ساتھ درندگی
فحش فلم کا اثر، یونیورسٹی کے طالبعلم کی ہم جماعت طالبہ کے ساتھ درندگی

  

نیویارک (نیوز ڈیسک) ہالی ووڈ کی فحش فلم ”ففٹی شیڈز آف گرے“ کے معاشرے پر بھیانک اثرات مسلسل سامنے آرہے ہیں اور تازہ ترین شرمناک واقعہ امریکہ میں پیش آیا ہے جہاں ایک نوجوان طالب علم نے فلم سے متاثر ہوکر اپنی ساتھی طالبہ پر دلخراش جنسی تشدد کیا ہے۔

کک کاﺅنٹی کے پراسیکیوٹر کا کہنا ہے کہ یونیورسٹی آف البنائے کا طالب علم محمد حسین فلم سے متاثر ہوکر اپنی 19 سالہ ساتھی طالبہ کو اپنے کمرے میں لے گیا اور وہاں اس کے ہاتھ اور ٹانگوں کو رسیوں سے بیڈ کے ساتھ باندھ دیا۔ لڑکی کے منہ میں ٹانی ٹھونسنے اور آنکھوں پر کپڑا باندھنے کے بعد طالب علم نے اس کے جسم کے نازک حصوں پر بیلٹ اور تھپڑوں کے ساتھ تشدد شرع کردیا۔ جب لڑکی نے شدت درد سے بے تاب ہوکر اپنا ایک بازو آزاد کروالیا تو اس نے لڑکی کے بازوﺅں کو قابو کرکے اس کی عصمت دری شروع کردی۔ جب سرکاری وکیل نے عدالت کو بتایا کہ محمد حسین کا شمار یونیورسٹی کے نمایاں ترین طالب علموں میں ہوتا ہے اور وہ کئی مقابلوں میں یونیورسٹی کی نمائندگی کرچکا ہے توجج نے حیرت کے ساتھ پوچھا کہ کیا اس قدر کامیاب طالب علم بھی ایک غلیظ فلم سے متاثر ہوسکتا ہے۔

لالی پاپ کو ختم کرنے کے لئے کتنی مرتبہ چاٹنا پڑتا ہے؟ماہرین نے دلچسپ جواب دے دیا

یونیورسٹی کی المنائے ایسوسی ایشن میں طلباءکی نمائندگی کرنے والے محمد حسین کا موقف ہے کہ یہ سب کچھ باہمی رضامندی سے کیا گیا۔ ملزم کے خلاف عدالتی کارروائی جاری ہے۔ جس کے مکمل ہونے پر ہی اصل حقائق سامنے آسکیں گے۔

مزید :

انسانی حقوق -