’یہ پورا علاقہ چین کے ’قبضے‘ میں چلاجائے گا‘ امریکی جرنیل کی دہائی، ایسی بات کہہ دی کہ امریکیوں کو پریشان کردیا

’یہ پورا علاقہ چین کے ’قبضے‘ میں چلاجائے گا‘ امریکی جرنیل کی دہائی، ایسی ...
’یہ پورا علاقہ چین کے ’قبضے‘ میں چلاجائے گا‘ امریکی جرنیل کی دہائی، ایسی بات کہہ دی کہ امریکیوں کو پریشان کردیا

  

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک) بحیرہ جنوبی چین میں طاقت کے بدلتے ہوئے توازن نے امریکا کو شدید تشویش میں مبتلا کردیا ہے، یہاں تک کہ اس کی فوجی قیادت نے بھی واویلا شروع کر دیا ہے کہ چین مشرقی ایشیاءکے خطے کا حکمران بننے والا ہے۔

خبر رساں ایجنسی ”روئٹرز“ کے مطابق امریکی پیسیفک کمانڈ کے سربراہ ایڈمرل ہیری ہیرس نے چین اور امریکا کے وزرائے خارجہ کی ملاقات سے عین پہلے جاری کئے گئے ایک بیان میں کہا کہ چین خطے میں میزائل اور راڈار نصب کررہا ہے، اس بات میں کوئی شک نہیں رہا کہ طاقت کا توازن تبدیل ہورہا ہے، اور چین خطے کا آپریشنل منظر نامہ تبدیل کررہا ہے۔ ایڈمرل ہیرس کا کہنا تھا کہ اگر آپ اس بات پر یقین نہیں رکھتے تو یہ بالکل ایسا ہی ہے کہ گویا آپ ابھی تک زمین کو سپاٹ سمجھتے ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ وہ سمجھتے ہیں کہ ووڈی آئی لینڈ میں زمین سے فضا میں مار کرنے والے میزائلوں اور راڈار سسٹم کی تنصیب جبکہ سپریٹلی آئی لینڈ میں رن وے تعمیر کرکے چین نے آپریشنل منظر نامہ تبدیل کردیا ہے۔ ایڈمرل ہیرس کے بیان کے کچھ ہی دیر بعد امریکی حکومت کے ذرائع نے اس بات کی بھی تصدیق کردی کہ چین نے ووڈی آئی لینڈ پر جنگی طیارے بھی پہنچادئیے ہیں۔

مزید جانئے: قزاق تیل سے بھرے بحری جہاز لوٹنے کی بجائے ان سے دور بھاگنے لگے، لیکن کیوں؟ وجہ ایسی کہ جان کر آپ کی حیرت کی بھی انتہا نہ رہے گی

بحیرہ جنوبی چین سے ہر سال تقریباً 5 کھرب ڈالر مالیت کا تجارتی سامان گزرتا ہے، اور دنیا بھر کے ممالک کے لئے یہ بحری راستہ اہمیت کا حامل ہے۔ امریکا اس خطے میں اپنے اتحادیوں کی حمایت کے نام پر مداخلت کرتا رہا ہے اور اثر و رسوخ بڑھانے کا خواہاں رہا ہے۔ دوسری جانب چین کی طرف سے بحیرہ جنوبی چین میں مصنوعی جزیروں کی تعمیر اور ان پر میزائل اور جنگی جہاز پہنچائے جانے کے بعد امریکا کو اپنے عزائم ناکام ہوتے نظر آرہے ہیں۔

اگرچہ چین کی طرف سے واضح کیا گیا ہے کہ بحیرہ جنوبی چین کے بین الاقوامی بحری راستے کو تمام ملک استعمال کرسکتے ہیں لیکن اس کے باوجود امریکا چین پر طاقت کا توازن بگاڑنے کا الزام لگا کر خطے میں خطرناک مداخلت کی نئی سازشوں میں مصروف ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -