’14ماہ تک حاملہ رہنے والی خاتون‘

’14ماہ تک حاملہ رہنے والی خاتون‘
’14ماہ تک حاملہ رہنے والی خاتون‘

  

نیویارک (نیوز ڈیسک) چودہ ماہ تک حاملہ رہنے کا دعوٰی کرنے اور ایک دوسری حاملہ خاتون کا پیٹ خنجر سے کاٹ کر اس کا بچہ چرانے والی سفاک خاتون ڈائنل لین کو عدالت نے مجرم قرار دے دیا ہے۔

اخبار ”ڈیلی میل“ کے مطابق ریاست کولوراڈو سے تعلق رکھنے والی ڈائنل لین کے خلاف مقدمے کی کارروائی تقریباً ایک سال سے جاری تھی۔ 35سالہ ڈائنل پر الزام تھا کہ اس نے 27 سالہ حاملہ خاتون مشیل ولکنز کا پیٹ کاٹ کر بچے کو باہر نکال لیا تھا، جس کی وجہ سے بچے کی موت ہوگئی البتہ مشیل ولکنز کرشماتی طور پر زندہ بچ گئی۔

مزید جانئے: اپنے ہمسفر سے لڑکیوں کو دور رکھنے کیلئے اس خاتون نے انوکھا ترین طریقہ نکال لیا، ایسا طریقہ کہ مرد دیکھ کر ہی گھبراجائیں

عدالت کو بتایا گیا کہ ڈائنل اپنے بوائے فرینڈ کے ساتھ ایک طویل عرصے سے جھوٹ بول رہی تھی کہ وہ حاملہ ہے۔ اس نے ایک موقع پر اپنے بوائے فرینڈ کو بتایا کہ وہ 14 ماہ کی حاملہ ہے اور عنقریب بچے کو جنم دینے والی ہے، اور پھر اس جھوٹ کو حقیقت کا روپ دینے کے لئے مشیل ولکنز نامی خاتون کا بچہ چرانے کی سازش تیار کی۔ اس نے انٹرنیٹ پر ویب سائٹ ”کریگز لسٹ“ پر بچوں کے ملبوسات کی فروخت کے متعلق اشتہار دے کر مشیل کو اپنے جال میں پھنسایا اور اسے اپنے گھر بلا کر اپنے شیطانی منصوبے کو عملی جامہ پہنایا۔

مشیل کا کہنا تھا کہ جب وہ سر پر چوٹ لگنے کے بعد زمین پر گرگئیں تو ڈائنل نے باورچی خانے سے چھری لاکر ان کا پیٹ کاٹ دیا۔ وہ کہتی ہیں کہ جب ان کا پیٹ کاٹا جا رہا تھا تو وہ بیہوش ہو گئیں، اور جب ہوش آیا تو اپنی انتڑیوں کو جسم سے باہر لٹکتے ہوئے پایا۔ اسی دوران ڈائنل ان کے بچے کو لے کر ہسپتال پہنچ چکی تھی، جہاں اس نے ایک اور جھوٹ بولتے ہوئے بتایا کہ اس کا 14 ماہ کا حمل ضائع ہو گیا تھا اور اس کے بچے کی موت ہوگئی تھی۔

اندوہناک حملے کا نشانہ بننے والی مشیل نے اپنی بدترین حالت کے باوجود کسی طرح ایمرجنسی سروس 911 سے رابطہ کرلیا اور حیرت انگیز طور پر ڈاکٹر ان کی جان بچانے میں کامیاب ہوگئے۔ وہ کہتی ہیں کہ انہوں نے ڈائنل کو معاف کر دیا ہے لیکن اس کی سفاکی اور بے حس کو کبھی بھلا نہیں پائیں گی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -