سید علی گیلانی کی طرف سے سانبہ میں شہری کے قتل ، گوجروں کے مکان منہدم کرنے کی شدید مذمت

سید علی گیلانی کی طرف سے سانبہ میں شہری کے قتل ، گوجروں کے مکان منہدم کرنے کی ...

  

سرینگر (اے پی پی) مقبوضہ کشمیرمیں کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین سید علی گیلانی نے سروڑہ سانبہ میں بھارتی پولیس کی طرف سے ایک شہری کے قتل اور گوجروں کے کچے رہائشی مکانات نذرآتش اور منہدم کرنے کی شدیدمذمت کی ہے ۔ کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق سید علی گیلانی نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں کہا ہے کہ جموں ڈویلپمنٹ اتھارٹی بی جے پی اور شیوسینا جیسی ہندو انتہا پسند جماعتوں کی ایماء پر غریب کشمیریوں کو کوئی متبادل رہائش فراہم کئے بغیر بے گھر کررہی ہے اور انہیں مسلمان ہونے کی وجہ سے نشانہ بنایا جارہا ہے ۔ انہوں نے خبردار کیا کہ وادی کے لوگ جموں کے اپنے بھائیوں کو فرقہ پرست ہندوؤں کے رحم وکرم پرہرگز نہیں چھوڑ یں گے اور 1947ء کی تاریخ دہرانے کی اجازت نہیں دی جائے گی جب ہزاروں بے گناہ مسلمانوں کا قتل عام کیا گیاتھا۔سید علی گیلانی کی ہدایت پر حریت رہنماء سرتاج شریف کی قیادت میں ایک وفد سروڈڑہ سانبہ گیا اور وہاں کے غریب گوجروں کے ساتھ ہمدردی کا اظہارِ کیا اور حریت کانفرنس کا یہ پیغام پہنچایا کہ ان پر ہورہے ظلم کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔ اور جب تک انہیں متبادل رہائش فراہم نہیں کی جاتی انہیں بے گھر کرنا سراسر ناانصافی ہے۔

ادھر نام نہاد اسمبلی کے رکن اور عوامی اتحاد پارٹی کے سربراہ انجینئر رشیدنے بھارتی پولیس کے ہاتھوں سروڑہ بری برہمناجموں میں محمد یعقوب نامی شخص کے قتل کے خلاف سول سیکریٹریٹ کے سامنے احتجاجی دھرنا دیا۔ انجینئر رشید کی سربراہی میں پارٹی کے درجنوں کارکن سول سیکریٹریٹ کے باہرجمع ہوئے اور احتجاجی دھرنا دیا ۔ کارکنوں نے شہری کے قتل اورکٹھ پتلی انتظامیہ کے رویے کے خلاف پلے کارڈز اْٹھا رکھے تھے۔ اس موقعے پر ذرائع ابلاغ نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے انجینئر رشید نے کہاکہ جموں ریجن کو عملاً ہندو انتہا پسند جماعتوں آر ایس ایس ، بی جے پی اور وشوا ہندو پریشد کے حوالے کردیا گیا ہے اور جموں کے مسلمانان عدم تحفظ کا شکار ہیں۔ انہوں نے سوال کیاکہ اگر گلمرگ سے جموں تک بعض بھارت نواز سیاست دانوں اور بیروکریٹس نے ہزاروں کنال جنگلات کی زمین پر قبضہ کیا ہے تو صرف مسلمانوں کو ہی نشانہ کیوں بنایا جا رہا ہے۔انہوں نے کہاکہ سکیولر اور لبرل ہونے کا ہر گز یہ مطلب نہیں کہ فرقہ پرست طاقتوں کو ظلم و زیادتی کی کھلی چھوٹ دیدی جائے ۔انہوں نے معاملے کی جوڈیشل کمیشن کے ذریعے تحقیقات کا مطالبہ کرتے ہوئے اس میں ملوث پولیس اہلکار وں اور دیگر لوگوں کی فوری گرفتاری کامطالبہ کیا۔

مزید :

عالمی منظر -