لاہور ہائیکورٹ نے بجلی کے بلوں کے ذریعے سیلز ٹیکس کے بقایاجات وصول کرنے سے روک دیا، ایف بی آر اور لیسکو سے تین ہفتوں میں جواب طلب

لاہور ہائیکورٹ نے بجلی کے بلوں کے ذریعے سیلز ٹیکس کے بقایاجات وصول کرنے سے ...

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ نے ایک سٹیل ملز کی درخواست پرلیسکو کو بجلی کے بلوں کے ذریعے سیلز ٹیکس کے بقایاجات وصول کرنے سے روکتے ہوئے ایف بی آر اور لیسکو سے تین ہفتوں میں جواب طلب کر لیاہے۔مسٹرجسٹس سید منصور علی شاہ نے مغل سٹیل کمپنی کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار کی طرف سے محسن ورک ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا کہ لیسکو صنعتی اداروں کو سیلز ٹیکس کے بقایات شامل کر کے بجلی کے بل بھجوا رہا ہے جو غیرقانونی اقدام ہے، قانون کے مطابق لیسکوکرنٹ بل پر سیلز ٹیکس وصول کر سکتا ہے لیکن سیلز ٹیکس کے بقایات بجلی کے بلوں کے ذریعے وصول نہیں کئے جا سکتے لیکن اس کے باوجود صنعتی اداروں کو بقایات شامل کر کے بجلی کے بل بھجوائے جا رہے ہیں، انہوں نے استدعا کی کہ لیسکو کو سیلز ٹیکس کے بقایا جات وصول کرنے سے روکا جائے، عدالت نے بجلی کے بلوں کے ذریعے سیلز ٹیکس کے بقایاجات وصول کرنے سے روکتے ہوئے ایف بی آر اور لیسکو سے تین ہفتوں میں جواب طلب کر لیاہے ۔

مزید :

صفحہ آخر -