بار کونسل نے ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کی عدم تعیناتی کیخلاف ہڑتال کی کال دے دی

بار کونسل نے ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کی عدم تعیناتی کیخلاف ہڑتال کی کال دے دی

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)پنجاب بار کونسل نے ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کی عدم تعیناتی کے خلاف ہڑتال کی کال دے دی جبکہ لاہور ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن نے اس کال پر ہڑتال نہ کرنے کا اعلان کردیا ہے ۔پنجاب بار کونسل نے آج 25فروری کوصوبے بھر میں ہڑتال کی کال دی ہے جبکہ لاہور بار ایسوسی ایشن کا کہنا ہے کہ لاہور ہائی کورٹ میں آج معمول کے مطابق کام ہوگا۔پنجاب بار کونسل کی وائس چیئرپرسن فرح اعجاز بیگ کی طرف سے جاری اعلامیے کے مطابق صوبے میں مستقل ایڈووکیٹ جنرل کا عہدہ ایک ماہ سے خالی ہے لیکن پنجاب حکومت بے حسی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ایڈووکیٹ جنرل تعینات نہیں کر رہی ہے، ایڈووکیٹ جنرل کی عدم تعیناتی کی وجہ سے پنجاب بار کونسل کے وائس چیئرمین اور چیئرمین ایگزیکٹو کمیٹی کے انتخابات التواء کا شکار ہیں، اعلامیے کے مطابق ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کی عدم تعیناتی کے خلاف پنجاب بار کونسل کی کال پر آج 25فروری کو صوبے بھر میں ہڑتال ہو گی، دوسری طرف لاہور ہائیکورٹ بار نے پنجاب بار کی کال پر ہڑتال کی کال کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ عدالت عالیہ میں کل معمول کے مطابق کم ہوگا، صدر ہائیکورٹ بار پیر مسعود چشتی کے مطابق پنجاب بار کونسل کو کوئی آئینی مسئلہ ہے تو وہ لاہور ہائیکورٹ میں درخواست دائر کرے لیکن ہڑتال کرنے سے کوئی فائدہ نہیں ہوگا بلکہ ہزاروں سائلین کے مقدمات متاثر ہوں گے ، پیر مسعود چشتی نے کہا کہ ہائیکورٹ بار ایسوسی ایشن کا پنجاب بار کونسل سے کچھ لینا دینا نہیں ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -