انشورنس کمپنیوں کیخلاف کلیم کی رقم ادا نہ کرنے پر400 سے زائد کیسز برسوں سے فیصلوں کے منتظر

انشورنس کمپنیوں کیخلاف کلیم کی رقم ادا نہ کرنے پر400 سے زائد کیسز برسوں سے ...

  

لاہور(نامہ نگار)انشورنس ٹربیونل پنجاب میں مختلف انشورنس کمپنیوں کے خلاف کلیم کی رقم ادا نہ کرنے پر400 سے زائد کیسزبرسوں سے فیصلوں کے منتظرہیں، انشورنس اور متعلقہ بینکوں کے عدم تعاون کی وجہ سے سائلین کو انصاف ملنا مشکل ہو گیاہے۔انشورنس ٹربیونل پنجاب ایڈیشنل سیشن جج چودھری منیر احمد کی عدالت میں مختلف انشورنس کمپنیوں کے خلاف چارسو سے زائد کیسز فیصلوں کے منتظر ہیں۔ عدالت کی جانب سے متعدد بار نوٹسز کے باوجود انشورنس کمپنیاں اور انشورنس سے متعلقہ بینکوں کے نمائندگان عدالت میں پیش نہیں ہوتے، جس کی وجہ سے سائلین خوار ہورہے ہیں۔ غلام مرتضی نے 2010ء میں پو سٹل انشورنس پا لیسی خریدی لیکن ایک سال بعد اس کا انتقال ہوگیا۔ غلام مرتضی کی بیوی کو انشورنس کی رقم ابھی تک نہیں مل سکی۔ محمد اشرف نے اپنی گاڑی کی انشورنس ای ایف یو سے کروائی۔ 2009ء میں اس کی گاڑی چوری ہو گئی لیکن ابھی تک اسے کلیم کی رقم نہیں مل سکی۔ اسی طرح دیگر کیسز میں بھی انشورنس کمپنیوں نے سائلین کو رقم ادا نہیں کی جس کی وجہ سے سائلین عدالت میں خوار ہورہے ہیں۔

مزید :

صفحہ آخر -