غیر قانونی شکارکرنے والوں سے 30ہزار روپے جرمانہ وصول کر لیا گیا

غیر قانونی شکارکرنے والوں سے 30ہزار روپے جرمانہ وصول کر لیا گیا

  

لاہور (لیڈی رپورٹر) ڈائریکٹر جنرل جنگلی حیات و پارکس پنجاب خالد ایاز خان کی غیر قانونی شکار اور جنگلی حیات کی سمگلنگ کی روک تھام کے لئے تشکیل دی گئی ٹیموں نے تین افراد کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے ان سے 30 ہزار روپے محکمانہ وصول کر لیا ہے جبکہ ضبط کردہ اشیاء کو تلف کر دیا ہے ۔ تفصیلات کے مطابق قصور کے سرحدی علاقے رکن پوسٹ کے مقام پر دو افراد اللہ دتہ اور محمد انور غیر قانونی طور پر جال لگا کر پرندوں کو پکڑ رہے تھے جس پر محکمہ کی ٹیم نے رینجرز کے جوانوں کی مدد سے ان کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے ان سے 20 ہزار روپے بطور محکمانہ معاوضہ وصول کر لیا ہے اور ان سے برآمد ہونے والے جال کو تلف کرتے ہوئے پکڑے گئے پرندوں کو آزاد کر دیا ہے ۔ دو سرے وقوعہ میں محکمہ جنگلی حیات کے افسران نے کسٹم حکام کی مدد سے علامہ اقبال انٹر نیشنل ایئر پورٹ سے ایک شخص محمد ارشد جو کہ کویت سے 30 کبوتر پاکستان لا رہا تھا کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے اسے سپیشل جوڈیشل مجسٹریٹ کینٹ کی عدالت میں پیش کر دیا جس پر عدالت نے وائلڈ لائف ایکٹ کے تحت ملزم سے 10 ہزار روپے بطور محکمانہ معاوضہ وصول کرنے اور لائے جانے والے کبوتروں کو جلو وائلڈ لائف پارک لاہور بھجوانے کے احکامات جاری کر دئیے ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -