اے ٹی آئی کے قافلے پر حملہ کی شدید مذمت کرتے ہیں، پولیس بے حسی نہ دکھائے، محمد اکرم

اے ٹی آئی کے قافلے پر حملہ کی شدید مذمت کرتے ہیں، پولیس بے حسی نہ دکھائے، محمد ...

  

لاہور( اپنے نامہ نگار سے ) انجمن طلباء اسلام پنجاب کے ناظم سید بو علی شاہ کے قافلے پر ظفر وال پسرور میں عشق رسول ؐسیمینار میں شرکت کیلئے جاتے ہوئے قاتلانہ حملہ ۔اندھادھند فائرنگ ۔اے ٹی آئی کے تین کارکن شدید زخمی ۔پولیس کی روائتی بے حسی ۔تفصیلات کے مطابق اے ٹی آئی صوبہ پنجاب کے ناظم سید بو علی شاہ قافلے کی قیادت کرتے ہوئے ظفر وال پسرور میں عشق رسول سیمینار میں شرکت کیلئے جا رہے تھے۔ کہ پیچھے سے سفید ڈالہ پر سوار ملزمان نے ناظم پنجاب کی گاڑی پر اندھا دھند فائرنگ کر دی جس کے نیتجہ میں انجمن طلباء اسلام کے تین کارکن رانا طلحہ ،شجاعت کھوکھر ۔معظم بیگ شدید زخمی ہو گئے ۔جنہیں مقامی ہسپتال ریفر کر دیا گیا ۔پولیس اپنی روائتی بے حسی کا مظاہرہ کرتے ہوئے واقعہ سے دو گھنٹے بعد پہنچی ۔جبکہ واقعہ کی اطلاع ملتے ہے انجمن طلباء اسلام کے کارکنان نے پنجاب کے مختلف شہروں اور تعلیمی اداروں میں احتجاج شروع کر دیا ہے ۔اور ملزمان کی گرفتار ی کا مطالبہ کیا ۔اے ٹی آئی کے ڈوثرنل ناظم محمد اکرم رضوی نے ایوان خیر میں منعقدہ مذمتی اجلاس میں واقعہ کی شدیدترین الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کیا۔

کہا کہ سیالکوٹ اتنظامیہ اگر ہمارے قیادت کو سیکورٹی نہیں دے سکتی تو چوڑیاں پہن لے ۔ہم اپنی قیادت کا دفاع خود کریں گے ۔تین یوم میں ہمارے رہنماؤں کے قاتل گرفتار نہ ہوئے تو دمادم مست قلندر ہوگا۔ نفرتوں کا پرچار کرنے والے ملک غدار ہیں ۔ قلم کی طاقت سے امن قائم کریں گے ۔ظفر وال میں ظلم کی ہولی کھیلنے میں انسان نہیں شطیان ہیں ۔معصوم طلباء پر حملہ علم دشمنی کی بد ترین مثال ہے۔انہوں نے کہا تعلیمی اداروں کا امن تباہ کرنے والے کو انکی کمین گاہوں سمیت نیست و نابود کر کے دم لیں ۔ہماری شرافت کو ہماری کمزوری نہ سمجھ جائے ۔بدلہ لینا بھی جانتے ہیں اور قربانیاں دینا ۔اجلاس میں ایک قرار داد کے ذریعے ملزمان کی فوری گرفتاری اور ڈی،پی،اوسیالکوٹ کی معطلی کا مطالبہ کیا گیا ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -