24سال بعد سزائے موت کے قیدی کے ڈیتھ وارنٹ جاری

24سال بعد سزائے موت کے قیدی کے ڈیتھ وارنٹ جاری

  

لاہور(نامہ نگار)ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نے سزائے موت کے قیدی کے 24 سال بعد ڈیتھ وارنٹ جاری کر دیئے ہیں، مجرم محمد آزاد کو 3 مارچ کو کوٹ لکھپت جیل میں تختہ دار پر لٹکایا جائے گا۔سیشن جج نذیر احمد گجانہ نے سزائے موت کے قیدی محمد آزاد کے بلیک وارنٹ جاری کر دیئے،محمد آزاد نے 1993 میں راوی روڈ کے علاقے میں اپنی بیوی عابدہ کو قتل کر دیا تھا،ایڈیشنل سیشن جج نے جرم ثابت ہونے پر محمد آزاد کو پھانسی کی سزا سنائی۔ پہلے لاہور ہائی کورٹ اور بعد میں سپریم کورٹ نے مجرم کی سزا کے خلاف اپیلیں مسترد کی، صدر مملکت نے بھی مجرم کی سزا موت کے خلاف رحم کی اپیل خارج کردی، جس پر ڈسٹرکٹ وسیشن جج لاہور نے مجرم محمد آزاد کے بلیک وارنٹ جاری کئے، محمد آزاد کو پھانسی دینے کے لئے عرفان علی کو جوڈیشل مجسٹریٹ تعینات کیا گیا ہے ۔

واضح رہے کہ مجرم کے اس سے قبل بھی ڈیتھ وارنٹ جاری کئے گئے تھے جس کے مطابق مجرم کو 11 فروری کو تختہ دار پر لٹکایا جانا تھاتاہم اس تاریخ کے مذکورہ احکامات سیشن جج نے معطل کر دیئے تھے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -