مولانا گوہر شاہ کا حکومتوں کے غیر سنجیدہ اقدامات کیخلاف اسمبلی سے واک آؤٹ

مولانا گوہر شاہ کا حکومتوں کے غیر سنجیدہ اقدامات کیخلاف اسمبلی سے واک آؤٹ

  

چارسدہ (بیورو رپورٹ)وفاقی اور صوبائی حکومتوں کے غیر سنجیدہ اقدامات کے خلاف مولانا سید گوہر شاہ کا قومی اسمبلی سے احتجاجاً واک آوٹ ۔ ایک طرف صوبائی جبکہ دوسری طرف وفاقی حکومت کے غیر منتخب لوگ ان کے حلقہ نیابت میں مداخلت کرکے سیاسی سکورنگ کی کو شش کر رہے ہیں ۔ وفاقی حکومت خاموش تماشائی بیٹھنے کی بجائے عوام کے مسائل پر توجہ دیں۔ جے یوآئی چارسدہ کا مولانا سید گوہر شاہ کو خراج تحسین ۔ تفصیلات کے مطابق رکن قومی اسمبلی مولانا سید گوہر شاہ نے گزشتہ روز قومی اسمبلی سے احتجاجاً واک آوٹ کیا ۔ مولانا سید گوہر شاہ نے توجہ دلاؤ نوٹس پر سپیکر کو مخاطب کر تے ہوئے کہا کہ ایک طرف تحریک انصاف کی صوبائی حکومت جبکہ دوسری طرف وفاقی حکومت غیر منتخب لوگوں کے ذریعے ان کے منصوبوں پر سیاست چمکا رہی ہے۔ ۔ مولانا سید گوہر شاہ نے پا سپورٹ آفس سمیت ان کے دیگر منصوبوں پرغیر منتخب لوگوں کی سیاسی سکورنگ پر شدید تنقید کی اور واضح کیا کہ پا سپورٹ آفس کھولنے کے حوالے سے آفتاب شیر پاؤ اور مجھے اعتماد میں نہیں لیا گیا ۔ مولانا سید گوہر شا سپیکر کے سامنے احتجاج ریکارڈ کرنے کے بعد اسمبلی اجلاس سے واک آوٹ کرگئے۔ جے یوآئی کے ضلعی امیر مولانا محمد ہاشم خان ، سیکرٹری اطلاعات عطاء اللہ خان اور دیگر نے رکن قومی اسمبلی مولانا سید گوہر شاہ کا اجلاس سے بائیکاٹ اور اصولی موقف اپنانے پر ان کو زبر دست خراج تحسین پیش کیا اور کہا کہ منتخب ایم این اے کی موجودگی میں غیر منتخب لوگوں کی ریاستی امور میں مداخلت کسی صورت قبول نہیں کرینگے ۔ پاسپورٹ آفس سمیت وفاقی حکومت کے تمام منصوبے مولانا سید گوہر شاہ کے مرہون منت ہیں اور اس پر دیگر سیاسی پارٹیوں کے لوگوں کو سیاست چمکانے کا موقع نہیں دیا جائیگا۔

مزید :

پشاورصفحہ اول -