بیورو کریٹس کی ترقیوں کو کالعدم قرار دینے کیخلاف وفاقی اپیل پر سماعت آج تک ملتوی

بیورو کریٹس کی ترقیوں کو کالعدم قرار دینے کیخلاف وفاقی اپیل پر سماعت آج تک ...

  

اسلام آباد(کرائم رپورٹر) اسلام آباد ہائی کورٹ نے بیورو کریٹس کی ترقیوں کو کالعدم قرار دینے کیخلاف وفاقی اپیل پر سماعت آج جمعرات تک ملتوی کردی ۔گزشتہ روز جسٹس عامر فاروق اور جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب پر مشتمل ڈویژن بینچ نے کیس کی سماعت کی ۔ متاثرہ بیورو کریٹس ڈپٹی کمانڈنٹ غنی الرحمان کی جانب سے بیرسٹر مسرور علی شاہ اور سیکرٹری کیڈ کی جانب سے ایڈووکیٹ عبدالرحمان صدیقی عدالت میں پیش ہوئے ۔ بیرسٹر مسرور علی شاہ نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ کوئی بھی شخص انصاف کے حصول کیلئے ہائی کورٹ آسکتا ہے اسی طرح بیورو کریٹس بھی اپنے ساتھ زیادتیوں کیخلاف ہائی کورٹ سے رجوع کرسکتے ہیں ۔ حکومت ان بیورو کریٹس کو ترقیاں دی ہیں جو آنے والے الیکشنوں میں موجودہ حکومت کے حق میں دھاندلی کیلئے کردار ادا کرسکیں اس دوران عبدالرحمان صدیقی نے اپنے دلائل میں کہا کہ جن سینئرز بیورو کریٹس کی مدت ملازمت پوری نہیں ہوئی جونیئر کے مقابلے ترقی ان کا حق ہے سینٹرل سلیکشن بورڈ نے کوئی ایسی وجہ نہیں بتائی کہ بیورو کریٹس کی پروموشن کیوں التواء میں ڈالی گئی ۔ سول سروس ایکٹ کے تحت پروموشن کے التواء کی وجوہات بتانی پڑتی ہیں پروموشن کے بعد ٹریننگ لینا اور امتحان دینا ضروری ہوتا ہے ایسے کئی افسران ہیں جنہیں پوری ٹریننگ دیئے بغیر ہی ترقی دے دی گئی جو غیر قانونی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ وہ دو ہزار سات کی پالیسی کے حوالے سے دلائل دینا چاہتے ہیں دلائل ابھی جاری تھے کہ عدالت نے وقت کی کمی کے باعث مزید سماعت آج جمعرات تک ملتوی کردی

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -