آصف چھوٹو کی گرفتاری، والدین رشتے دار خوفزدہ، گھروں کو تالے لگا کر روپوش

آصف چھوٹو کی گرفتاری، والدین رشتے دار خوفزدہ، گھروں کو تالے لگا کر روپوش

  

دائرہ دین پناہ (نمائندہ خصوصی، نامہ نگار )کالعدم لشکرجھنگوی کے سربراہ رضوان عرف آصف چھوٹو کی گرفتاری کے بعداسکا والد احمد خان، اسکے بھائی رحمت اللہ، جگنو،کاشف جوکہ اپنے اہل خانہ کے ہمراہ بیٹ لومڑ والا میں اور اس کی بیوی حبیبہ جوکہ بچوں سمیت آصف چھوٹوکے بہنوئی کے ہمراہ احسان پور سیڈ فارم میں رہائش پذیر تھے کے گھروں کو تالے لگے ہوئے ہیں اور وہ تونسہ بیراج کے جنگلوں میں روپوش ہو گئے ہیں۔اور اپنے مال مویشی بھی ساتھ لے گئے ہیں۔ آصف چھوٹو کا ایک بھائی محمدعامر کراچی میں رہائش پزیر بھی ہے۔ آصف چھوٹوکے متعلق مزیدانکشافات ہوئے موضع بیٹ قائم والادائرہ دین پناہ کا رہائشی رضوان علی عرف الیاس عرف آصف چھوٹو1983کواحمدخان گاڈی کے گھرمیں پیداہواکراچی کے ایک مدرسہ جامع کورنگی میں حفظ قران کی تعلیم حاصل کی اوروہیں سے تنظیم لشکرجھنگوی سے منسلک ہواجہاں سے والدین میں اختلافات ہونے کے بعددائرہ دین پناہ میں محلہ ریاض آباد(سرکارن) میں کرائے کے مکان میں رہائش پذیرہوگیاپہلی بارتمباکوفروش غلام محمدپٹھان کالائسنسی پسٹل چوری کیاجس کا مقدمہ تھانہ دائرہ دین پناہ میں درج ہوا30مئی 2005کو کراچی کی ایک مسجدپرحملہ کیاجس میں 5افرادجاں بحق ہوئے شدیدزخمی ہوجانے والے دہشت گردسے آصف چھوٹوکا لکھاہواخط بھی برامدہوا ۔اکتوبر2004میں سیالکوٹ کی ایک امام بارگاہ پر خودکش حملہ کرایا جس میں 30افرادشہیدہوئے اسلام آبادمیں حضرت بری امام مزارکے احاطہ میں خودکش حملہ کے دوران19افرادجبکہ کراچی دوبم دھماکوں میں 40افرادشہیدہوئے33 سالہ آصف چھوٹو افغانستان پرامریکی حملے سے قبل طالبان دورمیں وہیں مقیم رہاالقاعدہ نے پاکستان میں بہت سی کاروائیوں میں آصف چھوٹواوراس کے گروپ کو استعمال کیا کراچی کی دوبہنوں آصفہ اورصباکوخودکش حملہ کی تربیت دی بعدازاں آصفہ سے شادی کرلی دنوں بہنوں کو جون 2005میں سوات سے گرفتارکیاگیا آصفہ اورصباکے ماموں گل حسن کا بھی آصف چھوٹوسے قریبی تعلق تھاگل حسن نے چھوٹوکی ہدایت پر کراچی میں مسجدحیدری اورامام بارگاہ علی رضامیں بم دھماکے کرائے انسداددہشتگردی راولپنڈی کی خصوصی عدالت نے گیارہ بارموت کی سزاسنائی آصف چھوٹوعباس ٹاون کراچی دھماکہ کے علاوہ جسٹس مقبول باقرکے قتل سمیت 100سے زائد افرادکے قتل میں ملوث تھااوراس کے سرکی قیمت 25لاکھ سندھ حکومت نے مقررکررکھی تھی ڈیتھ سکواڈکاسرغنہ انتہائی مطلوب دہشتگردآصف چھوٹوکئی باردائرہ دین پناہ سیڈفارم احسان پور۔بستی گاڈی سندیلہ ۔سنجرسیداں میں مقیم اپنے عزیزواقارب کوبھی ملنے کیلئے آتارہادوماہ قبل بھی اپنے چچاغلام حسین المعروف تھانیدارگاڈی کے جنازہ میں بھی شرکت کی جبکہ جنوری 2016میں اپنی بیوی حبیبہ کی زچگی کے دوران دائرہ دین پناہ ہسپتال میں بھی دیکھاگیاگزشتہ دنوں گرفتاری سے قبل بلوچستان فراررہا تھا۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ اول -