سعودی عرب کا اہم تنصیبات کی سکیورٹی کیلئے خواتین کو بھرتی کرنے پر غور

سعودی عرب کا اہم تنصیبات کی سکیورٹی کیلئے خواتین کو بھرتی کرنے پر غور
سعودی عرب کا اہم تنصیبات کی سکیورٹی کیلئے خواتین کو بھرتی کرنے پر غور

  

ریاض(آن لائن)سعودی عرب نے اہم تنصیبات بالخصوص پٹرولیم اور صنعتی اداروں کی حفاظت کے لیے خواتین کو بھرتی کرنے اور انہیں فوجی تربیت دینے کے بعد بطور محافظ تعینات کرنے پر غور کرنا شروع کردیاہے۔ عرب خبررساں کے مطابق بلڈنگ سکیورٹی فورسزکی جانب سے جاری ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ فوج میں خواتین کا کردار مسلمہ ہے اور ان کی اسی اہمیت کے تناظر میں انہیں اہم تنصیبات کی حفاظت کے لیے تیار کرنے کا پروگرام زیرغور ہے۔ تلاشی اور چھان بین میں خواتین اہم کردار ادا کرتی ہیں۔ خواتین سکیورٹی اہلکاروں کی موجودگی میں کمپنیوں کے دفاترمیں ممنوعہ اشیاءلے جانے اور قوانین کی خلاف ورزیوں کی روک تھام میں مدد ملے گی۔سعودی عرب میں تنصیبات سکیورٹی فورسز کے سربراہ میجر جنرل سعد بن حسن الجباری نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ ملک میں پہلے ہی کئی اداروں کی سکیورٹی کے لیے خواتین کی خدمات حاصل کی جا رہی ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں میجر جنرل سعد الجباری کا کہنا تھا کہ سکیورٹی اور تلاشی کے لئے دنیا بھر میں جدیدترین آلات بھی موجود ہیں۔دہشت گردی کے بڑھتے خطرات کے انسداد کے لئے بھی ایسے آلات کا استعمال زیادہ اہمیت اختیار کر گیا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -