پسند کی شادی کرنے پر ماں نے بیٹی پر احاطہ عدالت میں ہی تھپڑوں کی بارش کردی

پسند کی شادی کرنے پر ماں نے بیٹی پر احاطہ عدالت میں ہی تھپڑوں کی بارش کردی
پسند کی شادی کرنے پر ماں نے بیٹی پر احاطہ عدالت میں ہی تھپڑوں کی بارش کردی

  

گوجرانوالہ(مانیٹرنگ ڈیسک) ماں کی بے خبری میں پسند کی شادی کے معاملے پر ماں نے بیٹی پر احاطہ عدالت میں ہی تھپڑوں کی بارش کردی۔

تفصیلات کے مطابق حافظ آباد کی رضیہ بی بی نے ایڈیشنل جج کے پاس رٹ دائر کر رکھی تھی جس میں اس نے الزام لگایا تھا کہ اس نے اپنی بیٹی کو شیخ اکرام کے گھر کام پر رکھوایا تھا تاہم مالکان 2 ماہ سے بیٹی سے ملنے نہیں دے رہے ۔ عدالت کے استفسار پر لڑکی نے عدالت کو بیان دیا کہ اس نے اپنی مرضی اور پسند سے شیخ اکرام سے شادی کرلی ہے، جس پر اس کی ماں طیش میں آگئی اور بیٹی پر احاطہ عدالت میں ہی تھپڑوں کی بارش کردی، لڑکی پر تشدد کا سلسلہ 15 سے 20 منٹ تک جاری رہا جس کے بعد پولیس والوں نے بڑی مشکل سے لڑکی کی جان چھڑائی اور اسے اس کے خاوند کے ساتھ وہاں سے روانہ کیا۔

مزید :

گوجرانوالہ -