والد کی3 ماہ کی بچی کی حوالگی کی درخواست پر 17 سال بعد فیصلہ، بیٹی کو ماں کے ساتھ رہنے کی اجازت

والد کی3 ماہ کی بچی کی حوالگی کی درخواست پر 17 سال بعد فیصلہ، بیٹی کو ماں کے ...
والد کی3 ماہ کی بچی کی حوالگی کی درخواست پر 17 سال بعد فیصلہ، بیٹی کو ماں کے ساتھ رہنے کی اجازت

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)والد کی تین ماہ کی بچی کی حوالگی کی درخواست پر 17 سال بعد فیصلہ سناتے ہوئے سپریم کورٹ نے بیٹی کو ماں کے ساتھ رہنے کی اجازت دے دی۔

نجی ٹی وی اے آروائی نیوز کے مطابق میاں بیوی میں علیحدگی کے وقت ان کی بیٹی کی عمر تین ماہ تھی جس کی حوالگی کیلئے والد نے عدالت میں درخواست دائر کررکھی تھی تاہم 17 سال بعد بالآخر سپریم کورٹ آف پاکستان نے درخواست کا فیصلہ سنادیا ہے ۔ سپریم کورٹ نے لڑکی کی خواہش پر اسے ماں کے ساتھ رہنے کی اجازت دے دی ہے اور کہا ہے کہ ہر15 روز کے بعد والد سے ملاقات ہوگی اور اگر عزت نہ کی تو عدالتی حکم کے تحت والد کے حوالے کردیں گے۔

مزید :

اسلام آباد -