فحش فلموں کی واحد پاکستانی اداکارہ نے ایسی بات کہہ دی کہ مسلمانوں کو غصہ دلادیا، ساتھ ہی پاکستان میں اپنے خاندان کے بارے میں ناقابل یقین انکشاف بھی کردیا

فحش فلموں کی واحد پاکستانی اداکارہ نے ایسی بات کہہ دی کہ مسلمانوں کو غصہ ...
فحش فلموں کی واحد پاکستانی اداکارہ نے ایسی بات کہہ دی کہ مسلمانوں کو غصہ دلادیا، ساتھ ہی پاکستان میں اپنے خاندان کے بارے میں ناقابل یقین انکشاف بھی کردیا

  

نیویارک (مانیٹرنگ ڈیسک) ترک وطن کے بعد سمندر پار جابسنے والے لاکھوں ایسے پاکستانی ہیں کہ جو آج بھی پاکستان کو ہی اپنا تعارف قرار دیتے ہیں اور ان میں سے اکثر کی دیارِ غیر میں کامیابیاں وطن کے لئے باعث فخر بھی ہیں، لیکن انہیں میں کچھ ایسے بھی شامل ہیں کہ جو اپنے افسوسناک طرز عمل کی وجہ سے وطن کے لئے شرمندگی کا باعث بنتے ہیں۔ امریکا میں فحش فلموں کے حوالے سے شہرت پانے والی 24 سالہ اداکارہ نادیہ علی بھی ایک ایسا ہی نام ہیں کہ جن کے طرز زندگی کا پاکستانی کلچر اور روایات سے دور دور کا بھی واسطہ نہیں اور جو فحش فلموں جیسے بے حیائی کے کام میں اپنا مقام بناچکی ہیں، لیکن اس کے باوجود خود کو پاکستانی اور مسلمان کہلوانے پر بضد ہیں۔

مزید جانئے: وہ کمپنی جو ایسی موبائل ایپ بنا رہی تھی جس میں مرد دوسروں کی بیگمات کو ریٹنگ دے سکیں، لیکن پھر کچھ ایسا ہوا کہ سارا منصوبہ ہی الٹ ہو گیا

جریدے ”ڈیلی بیسٹ“ کے مطابق نادیہ علی کا کہنا ہے کہ ان کے خاندان کا تعلق پاکستان سے ہے اور ان کی والدہ اور بہن حجاب بھی پہنتی ہیں اور باقاعدگی سے عبادت بھی کرتی ہیں۔ وہ کہتی ہیں کہ اگرچہ وہ فحش فلموں میں کام کرتی ہیں لیکن اس کے باوجود خود کو پاکستانی بھی سمجھتی ہیں اور مسلمان بھی۔ جائے حیرت ہے کہ یہ خاتون پاکستانی کلچر اور اپنے طرز زندگی کے فرق کو تسلیم کرنے سے یکسر انکاری ہیں۔

نادیہ علی اپنی بے حیائی میں اس قدر آگے بڑھ چکی ہیں کہ وہ فحش فلموں میں بھی حجاب کا استعمال کرتی نظر آتی ہیں۔ جب ان سے اس طرز عمل کے بارے میں سوال کیا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ وہ اپنی فلموں میں حجاب پہن کر اپنے کلچر اور روایات کو فروغ دے رہی ہیں۔ وہ کہتی ہیں ان کا خاندان ان کے کام کو قبول کرنے پر تیار نہیں، اور پاکستان میںکوئی ان کی شکل دیکھنے کا روادار نہیں، لیکن اس کے باوجود پاکستان آنے کا عزم رکھتی ہیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -