سجادہ نشین دیوان مودودمسعود چشتی کو رسومات کی ادائیگی سے روکنے کا نوٹیفیکیشن منسوخ

سجادہ نشین دیوان مودودمسعود چشتی کو رسومات کی ادائیگی سے روکنے کا ...

پاک پتن(نامہ نگار) محکمہ اوقاف نے دربار حضرت بابا فرید الدین مسعود گنج شکر کے سجادہ نشین قبلہ دیوان مودود مسعود چشتی فاروقی کو رسومات کی ادائیگی سے روکنے کا نوٹیفکیشن منسوخ کردیا،تفصیلات کے مطابق محکمہ اوقاف نے جمعرات کے روز دیوان مودود مسعود چشتی فاروقی کو رسومات کی ادائیگی سے روکنے کا نوٹیفکیشن جاری کر کے اختیار پیر مہر معین الدین چشتی کو دینے کا حکم جاری کیا لیکن گزشتہ روز سابقہ نوٹیفکیشن کو منسوخ کرنے کا نیا نوٹیفکیشن جاری کر دیا گیا، پہلے نوٹیفکیشن میں مبینہ طور پر الزام عا ئد کیا گیا تھا کہ فتوی کی بنا پر سجادہ نشین غیر شرعی فعل کے مرتکب پائے گئے ہیں۔ اس سلسلہ میں جب مقامی منیجردربار سے روز نامہ پاکستان نے دریافت کیا تو انہوں نے بتایا کہ دیوان صاحب کی زوجہ خورشید بی بی نے درخواست دے رکھی تھی کہ ان کے شوہر نے ان کی بھانجی سے غیر شرعی نکاح کیا ہوا ہے جس پر اوقاف کے بورڈ نے یہ فیصلہ کیا ہے ۔تاہم گزشتہ روز سیکرٹری اوقاف پنجاب محمد حسن اقبال کے حکم سے پہلا نوٹیفکیشن منسوخ کرتے ہوئے نیا حکم نامہ جاری کر دیا گیا جس میں دیوان مودود مسعود چشتی فاروقی کی سابقہ حیثیت کو بحال کر دیا گیا۔ذرائع کے مطابق محکمہ اوقاف نے دیوان صاحب کی زوجہ کو دھوکے سے بلوایا اور جعلسازی سے تین سوالوں پر مشتمل ایک کاغذ پر ان سے جوابات لیے گئے جن میں پوچھا گیا کہ کیا آپ ان کی زوجیت میں ہیں اور کیا دیوان صاحب نے کوئی اشٹام جاری کیا ہے جس میں آپ کی بھانجی سے نکاح کا اقرار ہے جس پر انہوں نے لکھا کہ میں ان کی زوجیت میں ہی ہوں لیکن کچھ دن سی علیحدہ ہوں اور اگر انہوں نے کوئی اشٹام جاری کیا ہے تو ان کو ہی علم ہو گا مجھے نہیں اور اوقاف نے اسی بیان کو درخواست بنا کر اپنی مخالفانہ کارروائی کر دی۔ دریں اثنا شہر بھرمیں اوقاف کے نوٹیفکیشن کی منسوخی کی اطلاع ملتے ہی شہریوں میں خوشی کی لہر ڈور گئی اور سینکڑوں عقیدت مند ناچتے ہوئے سڑکوں پر آ گئے جبکہ لوگ ایک دوسرے کو مبارک بادیں دیتے رہے اور کچہری دیوان صاحب میں ملک بھر سے آنے والے مریدین اور عقیدت مندوں کا تانتا بندھا رہا ۔

مزید : صفحہ آخر


loading...