ملتان میں مردم شماری کا پہلا مرحلہ،فوکل پرسن نہ ہونے سے کام متاثر

ملتان میں مردم شماری کا پہلا مرحلہ،فوکل پرسن نہ ہونے سے کام متاثر

ملتان(نمائندہ خصوصی)ملتان میں مردم شماری کا پہلا مرحلہ ہی مزاق بن گیا ہے اس کی بنیادی وجہ تحصیل کی سطح پر تعینات ہونے والے فوکل پرسن کی عدم دستیابی ہے ملتان کی چار تحصیلوں میں اسسٹنٹ کمشنرز کو فوکل پرسن مقرر کیا گیا ہے اس وقت صرف دو تحصیلوں میں شجاعباد اور جلالپور پیروالا (بقیہ نمبر19صفحہ12پر )

میں اسسٹنٹ کمشنرز تعینات ہیں جبکہ اسسٹنٹ کمشنر ملتان سٹی اور اسسٹنٹ کمشنر ملتان صدر کی پوسٹ پر گزشتہ 1ماہ سے خالی چلی آرہی ہیں۔فوکل پرسن نہ ہونے کیوجہ سے مردم شماری کا کام متاثر ہورہا ہے۔ایک دوسری فوکل پرسن کی عدم دستیابی نے مردم شماری کے کام کو متاثر کررکھا ہے تو دوسری طرف ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ ملتان کے آفیسران من مانی پر اتر آئے ہیں محکمہ تعلیم کی جانب سے 15مارچ سے شروع ہونے والی مردم شماری اور ٓخانہ شماری کیلئے مطلوبہ سٹاف مہیا کرنے سے انکار کردیا ہے فوکل پرسن نہ ہونے کی وجہ سے متبادل ذرائع کے استعمال کے بارے میں نہیں سوچا گیا۔محکمہ تعلیم نے عملہ کی عدم دستیابی کی بنیادی وجہ یہ بتائی ہے کہ امتحانی شیڈول کی وجہ سے اساتذہ مصروف ہیں جبہ طلباء کی تعلیم سرگرمیاں معطل ہونے کا خدشہ ظاہر کیا ہے۔اس صورتحال میں15مارچ سے شروع ہونے والی مردم شماری مقررہ ٹائم فریم میں مکمل نہیں ہوسکتی۔واضع رہے ملتان میں مردم شماری کا آغاز 15 مارچ سے ہوگا اور 15اپریل کو اختتام پذیر ہوجائے گا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...