آپریشن ردالفساد اہم قدم ہے، پاکستان دہششتگردی کیخلاف جنگ میں فتح حاصل کرے گا :چین

آپریشن ردالفساد اہم قدم ہے، پاکستان دہششتگردی کیخلاف جنگ میں فتح حاصل کرے ...

 بیجنگ (صبا ح نیوز)چینی وزارت خارجہ کے ترجمان گنگ شوانگ نے پاکستان میں جاری دہشت گردی کے خلاف شروع کیے جانے والے آپریشن ردالفسادپر تبصرہ کرتے ہوئے اسے دہشت گردوں کے خاتمے کے لیے اہم قدم قرار دیا ہے۔ترجمان چینی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ حکومت، فوج اور عوام کی مشترکہ کوششوں سے پاکستان دہشت گردی کے خلاف جنگ میں فتح حاصل کرے گا۔ان کا کہنا تھا کہ حالیہ برسوں کے دوران کیے جانے والے آپریشنز میں پاکستان نے دہشت گردی کے خاتمے کے لیے بھرپور کارروائیاں کر کے اہم کامیابیاں حاصل کی ہیں۔ترجمان کا کہنا تھا کہ چین پاکستان میں ہونے والے حالیہ دہشت گرد حملوں سے با خبرہے، ان حملوں میں جاں بحق اور زخمی ہونے والوں اور ان کے گھر والوں سے گہری ہمدردی و افسوس کا اظہار کرتا ہے۔ ترجمان نے یہ بھی کہا کہ چین پاکستان میں دہشت گردی کے خاتمے، قومی سلامتی اور عوام کی جان و مال کے تحفظ کی کوششوں میں پاکستانی حکومت کی حمایت جاری رکھے گا۔گنگ شوانگ نے امید ظاہر کی کہ پاکستانی حکومت، فوج اور عوام کی مشترکہ کوششوں سے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں فتح حاصل ہوگ چین کے سرکاری روزنامے’’گلوبل ٹائمز‘‘ نے چین پاکستان اقتصادی راہداری پر بھارت کے خدشات کو بے بنیادقراردیتے ہوئے مودی سرکارکومشورہ دیاہے کہ وہ پاکستان کی ترقی کو خطر ہ نہ سمجھے ۔ جمعہ کو اخبار میں شائع ہونے والے ایک مضمون میں کہاگیا کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری چین کے ایک پٹی ایک شاہراہ منصوبے کا حصہ ہے ۔اقتصادی راہداری کے معاشی فوائد کے ساتھ ساتھ اس منصوبے سے وسیع تر علاقائی تعاون کو بھی فروغ ملے گا ۔انہوں نے کہاکہ چین بھارت کی خودمختاری کا احترام کرتا ہے اقتصادی راہداری کے حوالے سے بھارت کے خدشات بے بنیاد ہیں بھارت چین کے سلک روڈ منصوبے کے حوالے سے وسیع النظری اور مثبت رویے کا مظاہرہ کرے ۔مضمون میں بھارت کوپیشکش کی گئی کہ وہ سلک روڈ سربراہ اجلاس میں شرکت کرے جو مئی میں بیجنگ میں ہوگا۔ اخبار لکھتا ہے کہ چین کا پاکستان اور بھارت کے درمیان علاقائی تنازعات میں مداخلت کا کوئی ارادہ نہیں، ہمارا یہ موقف ہے کہ دونوں ہمسایہ ملکوں کو مذاکرات اور مشاورت کے ذریعے مسائل کو حل کرناچاہیے اور ہم نے بارہا کہا ہے کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری کی تعمیر سے کسی علاقائی تنازعے پر کوئی اثر نہیں پڑے گا۔ اخبار نے مودی سرکار کو مشورہ دیا کہ وہ پاکستان کی ترقی کو خطرے کے طورپر نہ دیکھے چین ، پاکستان اور بھارت علاقے میں وسیع تر اقتصادی مواقعوں کو بروئے کار لانے کیلئے تعاون کرسکتے ہیں۔

چین

مزید : صفحہ اول


loading...