یہودی آبادکاروں کا ایک گروہ حضرت یوسف علیہ السلام کے مزار میں داخل

یہودی آبادکاروں کا ایک گروہ حضرت یوسف علیہ السلام کے مزار میں داخل
یہودی آبادکاروں کا ایک گروہ حضرت یوسف علیہ السلام کے مزار میں داخل

  


نابلس (اے این این) فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے کے شمالی شہر نابلس کے مشرق میں واقع جلیل القدر پیغمبر حضرت یوسف علیہ السلام کا مزارمقدس ایک بار پھر ناپاک صہیونیوں کے دھاووں کا نشانہ بنا ہے۔ گزشتہ روز یہودی شرپسندوں کے ایک ہجوم نے حضرت یوسف علیہ السلام کے مزار پر دھاوا بولا اور تلمودی تعلیمات کی روشنی م یں مذہبی رسومات کی ادائیگی کی آڑ میں مقدس مقام کی بے حرمتی کی۔ ادھر نابلس شہر میں بلاطہ پناہ گزین یمپ میں اسرائیلی فوج کی تلاشی کے دوران فائرنگ کے نتیجے میں ایک اسرائیلی فوج کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔

امریکا میں مسلمانوں سے تعصب کی انتہا،باکسر محمد علی کے بیٹے کو حراست میں لیے جانے کا انکشا ف

میڈیا رپورٹس کے مطابق جمعرات کو سینکڑوں یہودی شرپسند اسرائیلی فوج کی فول پروف سکیورٹی میں یوسف علیہ السلام کے مزار میں داخل ہوئے اور عبادت کی آڑ میں مقدس مقام کی بے حرمتی کی۔ عینی شاہدین کے مطابق بلاطہ پناہ گزین کیمپ میں اسرائیلی فوج کی جانب سے گھر گھر تلاشی کے دوران توڑ پھوڑ کی گئی اور شہریوں کو زدوکوب کیا گیا۔ اس موقع پر فائرنگ کے نتیجے میں ایک اسرائیلی فوجی زخمی ہوگیا۔ انہوں نے کہا کہ یہودی آباد کار حضرت یوسف علیہ السلام کے مزار پر دھاوے سے قبل حوارہ چوکی پر جمع ہوئے۔ اس کے بعد بیت فوریک اور شاہراہ الحسبہ سے ہوتے ہوئے بسوں کے ذریعے حضرت یوسف علیہ السلام کے مزار پر پہنچے۔ مقامی شہر اسامہ جمال نے بتایا کہ اسرائیلی فوجیوں نے بلاطہ پناہ گزین کیمپ کے تمام گھروں پر چھاپے مارے اور گھروں میں موجود خواتین اور بچوں کو زدوکوب کرنے کے ساتھ گھروں میں قیمتی سامان کی بھی توڑ پھوڑ کی۔ اس موقع پر فلسطینی شہریوں اور اسرائیلی فوجیوں کے درمیان جھڑپیں بھی ہوئیں۔

مزید : بین الاقوامی


loading...