اوکیف کی پھر ”بمباری“۔۔۔ آسٹریلیا نے پہلے ٹیسٹ میچ میں بھارت کو 333 رنز کی عبرتناک شکست دیدی

اوکیف کی پھر ”بمباری“۔۔۔ آسٹریلیا نے پہلے ٹیسٹ میچ میں بھارت کو 333 رنز کی ...
اوکیف کی پھر ”بمباری“۔۔۔ آسٹریلیا نے پہلے ٹیسٹ میچ میں بھارت کو 333 رنز کی عبرتناک شکست دیدی

  


پونے (ڈیلی پاکستان آن لائن) آسٹریلیا اور بھارت کے درمیان پہلے ٹیسٹ میچ کا نتیجہ تیسرے دن ہی سامنے آ گیا ہے اور بھارت کو 333 رنز کی شرمناک شکست سے کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ آسٹریلیا نے اس فتح کے ساتھ 6 سال بعد ایشیاءکی سرزمین پر کوئی ٹیسٹ میچ جیتا ہے جبکہ بھارت کو تقریباً پانچ سال بعد اپنی سرزمین پر ٹیسٹ میچ میں شکست ہوئی ہے۔

سٹیو او کیف کی تباہ کن باﺅلنگ کے سامنے بھارتی بیٹنگ لائن ریت کی دیوار ثابت ہوئی اور 441 رنز کے ہدف کے تعاقب میں پوری بھارتی ٹیم 107 رنز بنا کر چلتی بنی۔ آسٹریلیا کے او کیف کی ”بمباری“ سے بھارتی بیٹنگ لائن ”تباہ“ ہو گئی، انہوں نے مجموعی طور پر 12 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی۔

شادی کے سیزن میں اس چیز سے بال دھونے سے ان میں ایسی چمک آئے گی کہ سب آپ کی تعریف کرنے پر مجبور ہوجائیں گے

تفصیلات کے مطابق مہاراشٹرا کرکٹ ایسوسی ایشن سٹیڈیم پونے میں کھیلے گئے میچ میں آسٹریلیا نے ٹاس جیت کر بیٹنگ کا فیصلہ کیا اور پہلی اننگز میں 260 رنز بنا کرآﺅٹ ہو گئی۔ آسٹریلیا کی جانب سے میٹ رینشا نے 68، ڈیوڈ وارنر نے 38، سٹیو سمتھ نے 27، شان مارش نے 16، پیٹر ہینڈزکومب نے 22، مچل مارش نے 4، میتھیو ویڈ نے 8، مچل سٹارک نے 61، سٹیو او کیٹ نے 0، نیتھن لیون نے 0 اور جوش ہیزل ووڈ نے1 سکور بنایا۔

بھارت کی جانب سے اومیش یادیو نے عمدہ کھیل پیش کرتے ہوئے 4 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی جبکہ ایشوین نے 3، رویندرا جدیجہ نے 2 اور جیانت یادیو نے 1 وکٹ حاصل کی۔

آسٹریلوی ٹیم کو اتنے کم سکور پر آﺅٹ کر کے بھارتی ٹیم خوب خوشیاں منا رہی تھیں اور ابھی یہ خوشی کم نہ ہوئی تھی کہ آسٹریلوی باﺅلرز نے بھارتی شیروں کی درگت بناتے ہوئے انہیں بھیگی بلی بنا دیا اور پوری ٹیم کو 105 رنز پر پویلین بھیج دیا۔ بھارتی کھلاڑی اپنے ہی بنائے ہوئے جال میں پھنس گئے اور سٹیو او کیف کی گھومتی گیندوں سے ایسے چکرائے کہ صرف 11 رنز کے عوض 7 کھلاڑی آﺅٹ ہو گئے۔ بھارتی اوپنر لوکیش راہول نے سب سے زیادہ 64 رنز بنائے جس کے بعد تمام بلے باز خزاں کے پتوں کی طرح جھڑ گئے اور 8 کھلاڑی دوہرا ہندسہ عبور کرنے میں بھی ناکام رہے۔

ویرات کوہلی کو مچل سٹارک نے کھاتہ کھولے بغیر ہی پویلین بھیج دیا تو او کیف کی ”بمباری“ شروع ہو گئی جنہوں نے ایک ہی اوور میں 3 وکٹیں حاصل کیں جبکہ مجموعی طور پر 6 کھلاڑیوں کو آﺅٹ کیا جس کی بدولت بھارت کی پوری ٹیم صرف 105 رنز بنا کر آﺅٹ ہو گئی۔ بھارت کی جانب سے لوکیش راہول نے سب سے زیادہ 64 رنز بنائے جبکہ دیگر بلے بازوں میں مرلی وجے نے 10، چتیشور پجارا نے 6، ویرات کوہلی نے 0، اجنکیا ریحانے نے 13، ایشوین نے 1، وردھیومن ساہا نے 0، رویندرا جدیجہ نے 2، جیانت یادیو نے 2، اومیش یادیو نے4 اور ایشانت شرما نے 2 رنز بنائے۔

آسٹریلیا کی جانب سے سٹیو اوکیف مرد میدان ثابت ہوئے جنہوں نے ناصرف ایک اوور میں 3 وکٹیں حاصل کیں بلکہ مجموعی طور پر 6 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی جبکہ مچل سٹارک نے 2، اور جوش ہیزل ووڈ ، نیتھن لیون نے ایک، ایک وکٹ حاصل کی۔

آسٹریلیا نے 155 رنز کی برتری کے ساتھ دوسری اننگز کا آغاز کیا تو بھارتی سپنر روی چندرن ایشوین اور رویندر جدیجہ نے بہترین کارکردگی دکھائی جس کے باعث پوری ٹیم 285 سکور پر آﺅٹ ہو گئی او ریوں بھارت کو جیت کیلئے 441 رنز کا ہدف مل گیا۔ آسٹریلیا کی جانب سے کپتان سٹیو سمتھ نے 109 رنز کی عمدہ اننگز کھیلی جبکہ ڈیوڈ وارنر نے 10، شان مارش نے 0، پیٹر ہینڈزکومب نے 19، میٹ رینشاءنے 31، مچل مارش نے 31، میتھیو ویڈ نے 20، مچل سٹارک نے 30، سٹیو اوکیف نے 6، نیتھن لیون نے 13 اور جوش ہیزل ووڈ نے 2رنز بنائے۔

بھارت کی جانب سے روی چندرن ایشوین سب سے کامیاب باﺅلر رہے جنہوں نے 4 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی جبکہ رویندرا جدیجہ نے 3، اومیش یادیو نے 2، اور جیانت یادیو نے 1 وکٹ حاصل کی۔

TapMad نے ہمہ وقت سرگرم رہنے والوں کے لئے انٹرٹینمنٹ کی نئی دنیا متعارف کروادی

ہدف کے تعاقب کا عزم لئے میدان میں آنے والے بھارتی بلے باز ایک بار پھر ناکام ہو گئے اور پوری ٹیم 107 رنز پر چلتی بنی۔ بھارت کی جانب سے مرلی وجے نے 2، لوکیش راہول نے 10، چتیشور پجارا نے 31، ویرات کوہلی نے 13، اجنکیا ریحانے نے 18، روی چندرن ایشوین نے 8، وریدھیومن ساہا نے 5، رویندرا جدیجہ نے 3 اور جیانت یادیو نے 5 رنز بنائے جبکہ ایشانت شرما اور اومیش یادیو کھاتہ کھولے بغیر ہی پویلین لوٹ گئے۔

آسٹریلیا کی جانب سے دوسری اننگز میں بھی اوکیف ہی مرد میدان ثابت ہوئے جنہوں نے ایک بار پھر 6 وکٹیں حاصل کیں اور میچ میں مجموعی طور پر 12 شکار کئے۔ دوسری اننگز میں نیتھن لیون نے بھی او کیف کا بھرپور ساتھ دیا اور 4 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی۔

مزید : کھیل


loading...