نسلی تعصب کی سوچ پنجاب میں پنپنے نہیں دیںگے: ملک محمد احمد خان

نسلی تعصب کی سوچ پنجاب میں پنپنے نہیں دیںگے: ملک محمد احمد خان
نسلی تعصب کی سوچ پنجاب میں پنپنے نہیں دیںگے: ملک محمد احمد خان

  


لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) ترجمان پنجاب حکومت ملک محمد احمد خان نے پٹھانوں کے حوالے سے پنجاب پولیس کی جانب سے جاری کیے جانے والے نوٹیفکیشنز یا تعصبانہ رویہ اختیار کرنے کے الزامات کو مسترد کردیا اور کہا ہے کہ منڈی بہاﺅالدین میں پولیس کی جانب سے کوئی نوٹیفکیشن جاری نہیں ہوا ، پولیس سے منسوب کیے جانے والے نوٹیفکیشن کا فرانزک جائزہ لے رہے ہیں، نسلی تعصب کی سوچ کو پنجاب میں پنپنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

دہشتگردوں کے خلاف کارروائیوں کی آڑمیں پنجاب پولیس صوبائی عصبیت کو ہوا دینے لگی،حیران کن اقدامات شروع کردیے

نجی ٹی وی جیو نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے ترجمان پنجاب حکومت کا کہنا تھا کہ منڈی بہاﺅالدین میں پنجاب پولیس کے ترجمان کی جانب سے منسوب جو نوٹیفکیشن گردش کر رہا ہے وہ حقائق پر مبنی نہیں ہے۔ ہم نے ڈی پی او اور ڈی سی او سمیت دیگر افراد سے تصدیق کرلی ہے جس میں پتا لگا ہے کہ یہ ان کی طرف سے جاری نہیں ہوا۔ اس نوٹیفکیشن کی زبان بھی دیکھی جائے تو اس سے بالکل بھی یہ نہیں لگتا کہ یہ سرکاری طور پر جاری ہوا ہو ، اس حوالے سے فرانزک تحقیقات کی جا رہی ہیں اور بہت جلد حقائق جان لیں گے۔

”ایسی بیمار ذہنیت کے لوگوں کو جیل میں سڑنا چاہیے“بختاور اور آصفہ بھٹو زرداری نے اپنے والدکے فیصلے کے خلاف بغاوت کردی

انہوں نے کہا کہ نیشنل ایکشن پلان میں یہ درج تھا کہ افغان مہاجرین کی بائیو میٹرک تصدیق کی جائے گی ، پنجاب میں 2 لاکھ 20 ہزار تک افغان مہاجرین موجود ہیں جبکہ ان میں سے صرف ایک لاکھ 60 ہزار کے قریب مہاجرین کی بائیو میٹرک تصدیق ہوئی ہے۔ باقی افغان مہاجرین کی بائیو میٹرک تصدیق کی جا رہی ہے جس پر پریشانی کی کوئی بات نہیں ۔ وزیر اعلیٰ پنجاب اور پنجاب حکومت کی طرف سے میں یہ باور کرانا چاہتا ہوں کہ نسلی تعصب کی سوچ کو پنجاب میں پنپنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

مزید : لاہور


loading...