پنجاب میں پختونوں کو ہراساں اور ان کے خلاف منفی پروپیگنڈا فوری طور پر بند کیا جائے، فاٹا کے خیبر پختونخوا میں شامل ہونے سے دہشت گردی میں کمی آئے گی :آفتاب شیر پاو

پنجاب میں پختونوں کو ہراساں اور ان کے خلاف منفی پروپیگنڈا فوری طور پر بند ...
 پنجاب میں پختونوں کو ہراساں اور ان کے خلاف منفی پروپیگنڈا فوری طور پر بند کیا جائے، فاٹا کے خیبر پختونخوا میں شامل ہونے سے دہشت گردی میں کمی آئے گی :آفتاب شیر پاو

  


پشاور (صباح نیوز)قومی وطن پارٹی کے چیئرمین آفتاب احمد خان شیرپاو نے ملک میں حالیہ دہشت گردی کی لہر پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ  پنجاب میں پختونوں کو ہراساں اور ان کے خلاف منفی پروپیگنڈا فوری طور پر بند کیا جائے،حالیہ دہشت گردی کے واقعات سے عوام میں خوف وہراس کی فضاء پیدا ہو رہی ہے ، وفاقی حکومت کی جانب سے نیشنل ایکشن پلان پر صحیح معنوں میں عمل درآمد نہیں ہوا جس کی وجہ سے دہشت گرد ایک بار پھر ملک میں امن امان کو خراب کرنے میں لگے ہوئے ہیں.

مزید پڑھیں:نسلی تعصب کی سوچ پنجاب میں پنپنے نہیں دیںگے: ملک محمد احمد خان

شب قدر سے تعلق رکھنے والے سیاسی رہنماء سعید خان نے اپنے ساتھیوں سمیت قومی وطن پارٹی میں شمولیت کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے آفتاب شیرپاو نے کہا کہ فاٹا اور خیبرپختونخواکے انضمام سے کے پی نا صرف ملک کا دوسرا بڑا صوبہ بن جائے گا بلکہ دہشت گردی میں بھی خاطر خواہ کمی آئے گی کیونکہ اس سے قانون نافذ کرنے والے ادارے اور عدلیہ کو فاٹا تک رسائی ممکن ہو سکے گی۔ آفتاب شیرپاو نے افغانستان کے ساتھ بگڑتے ہوئے تعلقات پر بھی تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بارڈر بند ہونے سے دونوں ملکوں کے مابین تجارت کو نقصان پہنچے گا ،مسئلے کے حل کیلئے دونوں ملکوں کو اقدامات اٹھانے چاہیے کیونکہ دہشت گرد دونوں ممالک کے امن امان کو خراب کر رہے ہیں۔ انھوں نے مزید کہا کہ ملک کی خارجہ پالیسی پر غور کرنے کی ضرورت ہے اور تعلقات کی بہتری کیلئے سفارتی کوشش تیز کرنی چاہیے ،دہشت گردوں کے خلاف دونوں ممالک کو مشترکہ آپریشن کرنے کی ضرورت ہے نا کہ دونوں ممالک الزام تراشی میں وقت ضائع کرے ۔ آفتاب شیرپاو نے کہا کہ پنجاب میں پختونوں کو ہراساں اور ان کے خلاف منفی پروپیگنڈا فوری طور پر بند کیا جائے ، ایسے اقدامات سے وفاق کمزور ہو رہا ہے ، قومی وطن پارٹی اس کی روک تھام کے لیے ہر ممکن کوشش کرے گی۔

مزید : پشاور


loading...