امن کے باعث فلمی صنعت کی بحالی کا عمل شروع ہونا خوش آئند ،مریم اورنگزیب

امن کے باعث فلمی صنعت کی بحالی کا عمل شروع ہونا خوش آئند ،مریم اورنگزیب

اسلام آباد (اے پی پی) وزیر مملکت برائے اطلاعات ونشریات و قومی ورثہ مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ پاکستان کی ثقافت اور قومی ورثے کے محافظ آرٹسٹ ہیں، عالمی سطح پر ملک کامثبت تشخص اجاگر کرنے میں فنکاروں کا کلیدی کردار ہوتا ہے، ماضی میں ہماری روشن روایات اور اقدار کو تنگ نظری سے تبدیل کرنے کا گھناؤنا کھیل کھیلا گیا، ہماری ہمہ جہت ثقافت کو لہو رنگ کیا گیا، ملک میں دہشت گردی کی وجہ سے پاکستان کا عالمی تشخص متاثر ہوا، سابق وزیراعظم محمد نواز شریف کے وژن کے تحت اٹھائے گئے اقدامات پاکستان کی مسلح افواج اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کی بے مثال قربانیوں سے ملک کا امن بحال ہوا، ملک میں امن کے باعث فلمی صنعت میں بھی بحالی کا عمل شروع ہوا ہے جو نہایت خوش آئند ہے، ماضی میں آرٹسٹوں کو نظرانداز کیا گیا اور ان کو ان کے حقوق نہیں ملے،وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کنونشن کے اختتامی روز فن سے وابستہ افراد کی فلاح و بہبود، ملکی ثقافت کی ترویج اور فلم و سینما کے کھوئے ہوئے مقام کی بحالی پر مشتمل پاکستان کی پہلی قومی فلم اور کلچر پالیسیوں کا اعلان کریں گے، پاکستان کی مسلح افواج اور قانون نافذ کرنے والے ادارے جس طرح ہماری سرحدو ں اورملک میں امن وامان کے محافظ ہیں اسی طرح معاشرے کی مثبت ساکھ کے محافظ فن سے وابستہ لوگ ہیں۔ وہ ہفتہ کوپاکستان نیشنل کونسل آف آرٹس (پی این سی اے)میں قومی آرٹسٹ کنونشن کی افتتاحی تقریب سے خطاب کررہی تھیں۔تقریب سے پی این سی اے کے ڈائریکٹرجنرل جمال شاہ نے بھی خطاب کیا۔ مریم اورنگزیب نے مزید کہا کہ کنونشن میں ملک بھر سے آرٹسٹوں کی شرکت پر بے خوشی ہے، آئندہ تقریبات اردو زبان میں منعقد ہونی چاہئیں، ہم اپنی زبان سے بہت دور ہوچکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ماضی میں اردو زبان کے فروغ میں پی ٹی وی کااہم کردار رہا۔ معاشرے میں عدم برداشت ہے ، ایک دوسرے کی رائے سننے کو ہم تیار نہیں، مثبت کی بجائے منفی رائے کو زیادہ اچھالا جاتا ہے۔انہوں نے کہا کہ میڈیا کو بھی اس بارے میں سوچنا چاہئے، خبرکی دوڑ اور سنسنی خیزی کو ختم کرنا ہو گا، ملک میں ہر سطح پر بہتری کیلئے اجتماعی کاوشوں کی ضرورت ہے۔

مزید : صفحہ آخر